Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / ر11ستمبر کو مقرر، III ،بالآخر منسوخ، چیف منسٹر کا اعلان ایمسیٹ II ایمسیٹ

ر11ستمبر کو مقرر، III ،بالآخر منسوخ، چیف منسٹر کا اعلان ایمسیٹ II ایمسیٹ

کوئی متبادل نہیں تھا، مجبوراً تکلیف دہ فیصلہ، کے سی آر کا اعتراف، کسی نئی فیس یا نئے ہال ٹکٹ کی ضرورت نہیں، امیدواروں کیلئے مفت آر ٹی سی خدمات

حیدرآباد 2 اگسٹ (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ ریاست کے میڈیکل و ڈینٹل کالجوں میں داخلوں کے لئے ایمسیٹ III منعقد کرنے کا فیصلہ کیا اور اس فیصلہ کے ساتھ ہی ایمسیٹ III کا شیڈول جاری کردیا گیا۔ شیڈول کے مطابق ایمسیٹ III کا آئندہ ماہ 11 ستمبر کو انعقاد عمل میں لایا جائے گا۔ تلنگانہ اسٹیٹ کونسل برائے اعلیٰ تعلیم نے اس بات کا اعلان کیا اور بتایا کہ ایمسیٹ III کا 11 ستمبر کو صبح دس بجے تا دوپہر ایک بجے تک منعقد ہوگا۔ کونسل ذرائع نے کہاکہ ایمسیٹ II کے پرچہ سوالات کا افشاء ہونے کی وجہ سے ہی ایمسیٹ II کو منسوخ کرنے پر حکومت مجبور ہوگئی جبکہ دوبارہ ایمسیٹ III میں شریک ہوکر امتحان تحریر کرنا طلباء و طالبات کے لئے تکلیف دہ بات ہونے کے باوجود بعض ناگزیر حالات کے باعث بہت ہی سخت ترین فیصلہ کرنے پر حکومت کو مجبور ہونے کا چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے اعتراف کیا اور کہاکہ ایمسیٹ III کیلئے کوئی فیس ادا کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔ سابق ہال ٹکٹس کے ساتھ ہی طلباء و طالبات امتحان میں شرکت کرنے کے اہل ہوں گے۔ قبل ازیںاعلیٰ سرکاری ذرائع نے اعلان کیا تھا کہ تلنگانہ حکومت نے آخر کار ایمسٹ II کو منسوخ کردیا ہے۔ اس طرح گزشتہ چند دن سے ایمسٹ II کے مستقبل پر جاری تعطل کا خاتمہ ہوگیا۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے آج اعلیٰ سطحی اجلاس میں ایمسٹ II کو کالعدم قرار دینے اور نئے امتحان کے انعقاد کو منظوری دیدی۔ ڈپٹی چیف منسٹر و وزیر تعلیم کڈیم سری ہری ، وزیر صحت لکشما ریڈی اور دیگر اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس میں چیف منسٹر نے کہا کہ ایمسٹ II کے افشاء کی تحقیقاتی رپورٹ کی بنیاد پر حکومت کیلئے منسوخی کا فیصلہ ناگزیر ہے۔ انہوں نے اس سلسلہ میں طلبہ اور سرپرستوں سے تعاون کی اپیل کی۔ ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس سے متعلق ایمسٹ II کے افشاء کی سی آئی ڈی نے تحقیقات کے بعد حکومت کو رپورٹ پیش کی۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ایمسٹ II کا افشاء انتہائی افسوسناک اور بدبختانہ ہے اور حکومت کے پاس امتحان کو کالعدم کرنے کے سوا کوئی اور راستہ نہیں ہے، لہذا طلبہ اور سرپرستوں کو حکومت کے فیصلہ کو قبول کرنا چاہئے ۔ چیف منسٹر نے کونسل فار ہائیر ایجوکیشن، جین این ٹی یو اور ہیلت یونیورسٹی کے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ شام تک ایمسٹ III کا شیڈول جاری کردیں۔ حکومت نے ایمسٹ III کے انعقاد کی ذمہ داری جے این ٹی یو کو دی ہے اور کنوینر و معاون کنوینر کو مقرر کرنے کی ہدایت دی۔ انہوں نے ایمسٹ III میں کسی طرح کی بے قاعدگیوں کے تدارک اور افشاء کو روکنے کیلئے ہر ممکن احتیاطی اقدامات کی ہدایت دی۔ ایمسٹ II لکھنے والے طلبہ کو مزید نئی درخواست دینے کی ضرورت نہیں ہوگی۔ وہ پرانے ہال ٹکٹ پر ایمسٹ III امتحان لکھ سکتے ہیں۔ طلبہ کو ایمسٹ III کیلئے علحدہ فیس ادا کرنے کی بھی ضرورت نہیں ہوگی۔ حکومت نے طلبہ کیلئے آر ٹی سی میں مفت سفر کی سہولت فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اہم مقامات کیلئے خصوصی بسیں چلائی جائیںگی۔ چیف منسٹر نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ ایمسٹ III کی تیاری کیلئے طلبہ کو اسٹڈی میٹریل اور کوسچن بینک اور دیگر میٹریل جے این ٹی یو کی ویب سائیٹ پر دستیاب رکھیں۔ اسی دوران ہائی کورٹ کی ہدایت کے مطابق حکومت نے عدالت کو ایمسٹ II کی منسوخی کے فیصلہ سے واقف کرایا جس پر عدالت نے بھی حکومت کے فیصلہ سے اتفاق کیا ہے۔ سی آئی ڈی تحقیقات میں پتہ چلا کہ ایمسٹ II کے افشاء سے 103 طلبہ کو فائدہ ہوا۔ اس سلسلہ میں سی آئی ڈی کی تحقیقات ابھی جاری ہے۔ جائزہ اجلاس میں چیف منسٹر نے کہا کہ ایمسٹ کے دوبارہ انعقاد کے سواء حکومت کے پاس کوئی راستہ نہیں ہے۔ انہوں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ احتجاج کرنے والے طلبہ کو پریشان نہ کریں۔ چیف منسٹر نے کہا کہ اس طرح کے غیر متوقع حالات میں بعض طلبہ کیلئے دشواری فطری امر ہے۔ لہذا طلبہ اور ان کے سرپرستوں کو حکومت سے تعاون کرنا چاہئے۔ انہوں نے طلبہ کو مشورہ دیا کہ وہ احتجاج کے ذریعہ وقت خراب کرنے کے بجائے آئندہ امتحان کی تیاری میں جٹ جائیں۔ انہوں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ طلبہ کو ذہنی اذیت میں مبتلا کرنے والے افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ خاطی چاہے کتنے ہی بڑے کیوں نہ ہوں، گرفتار کرنے اور تحقیقات کی ہدایت دی۔ انہوں نے پرچوں کے افشاء کو روکنے کیلئے بروکرس سے ملی بھگت کرنے والے سرپرستوں کے خلاف بھی قانون کے مطابق کارروائی کی ہدایت دی۔ چیف منسٹر نے طلبہ کیلئے ہال ٹکٹ آن لائین ڈاؤن لوڈ کرنے کی سہولت فراہم کرنے کی ہدایت دی۔ جائزہ اجلاس میں پرنسپل سکریٹری ہیلت راجیو تیواری ، وائس چانسلر جے این ٹی یو وینوگوپال ریڈی ، وائس چانسلر ہیلت یونیورسٹی کروناکر ریڈی، صدرنشین کونسل فار ہائیر ایجوکیشن پاپی ریڈی ، آئی جی انٹلیجنس شیودھر ریڈی ، آئی جی سی آئی ڈی سومیا مشرا ، چیف منسٹر کے سکریٹری راج شیکھر ریڈی اور دوسروں نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT