Thursday , June 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ر500 روپئے کے نئے نوٹوں کیلئے مزید ایک ہفتہ انتظار

ر500 روپئے کے نئے نوٹوں کیلئے مزید ایک ہفتہ انتظار

ملک بھر میں 10 ہزار اے ٹی ایم مشینوں کے سافٹ ویر کی تبدیلی کا عمل جاری

حیدرآباد ۔ 22 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : کرنسی کی منسوخی کے بعد بنکوں اے ٹی ایم اور پوسٹ آفسوں کی قطاروں میں 70 افراد فوت ہوئے ہیں ۔ 500 روپئے کی نئی نوٹ اے ٹی ایم تک پہونچنے کے لیے مزید ایک ہفتہ انتظار کرنا پڑے گا ۔ 8 نومبر کی شام میں وزیراعظم نریندر مودی نے اچانک 500 اور 1000 روپئے کی نوٹوں کو منسوخ کرنے کا اعلان کیا ۔ مرکزی حکومت کے اس فیصلے سے سارے ملک میں بے چینی دیکھی جارہی ہے ۔ کاروبار ٹھپ ہوگیا ۔ عوام روزمرہ کی زندگی گذارنے کے لیے بنکوں ، اے ٹی ایم اور پوسٹ آفسوں میں لمبی لمبی قطاروں میں جمع ہو کر منسوخ شدہ نوٹ تبدیل کرانے کے ساتھ ساتھ اپنے موجود بنک کھاتوں میں ڈپازٹ کرانے میں مصروف ہیں ۔ اس دوران سارے ملک میں 70 افراد فوت ہونے کی اطلاعات وصول ہوئی ہے ۔ وزیراعظم کے فیصلے کا غریب عوام کی زندگیوں پر بہت زیادہ اثر پڑا ہے ۔ بڑی نوٹوں کی منسوخی کے بعد ملک میں چلر کی بھی قلت پیدا ہوگئی ہے ۔ سارے ملک میں 2 لاکھ سے زائد اے ٹی ایم ہیں تاہم نئی نوٹوں کے لیے اے ٹی ایم کا سافٹ ویر تبدیل نہیں کیا گیا ہے جس سے 2000 اور 500 کی نوٹوں کا انتظام کرنے میں تاخیر ہوگئی ہے ۔ جیسے تیسے کر کے 2000 روپئے کی نوٹوں کا سافٹ ویر بڑی حد تک تبدیل ہوگیا ہے ۔ 500 روپئے کی نئی نوٹ کا سافٹ ویر دھیرے دھیرے تبدیل ہورہا ہے ۔ بنک کے عہدیداروں نے بتایا کہ تلنگانہ میں 500 کی نئی نوٹ کے چلن کو عام ہونے میں تقریبا ایک ہفتہ لگے گا ۔ کیوں کہ سارے ملک میں ہر دن 10 ہزار اے ٹی ایم کے سافٹ ویر تبدیل ہورہے ہیں ۔ بنک عہدیداروں نے بتایا کہ نومبر کی تنخواہوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے سافٹ ویر اپ گریڈ کرنے کے عمل کو تیز کردیا گیا ہے ۔ اس کام کے لیے 2 ہزار سے زائد انجینئرس کی خدمات سے استفادہ کیا جارہا ہے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT