Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / زرعی قرض معافی پر فرنویس سے شیوسینا کی حساب طلبی

زرعی قرض معافی پر فرنویس سے شیوسینا کی حساب طلبی

ممبئی،19اگست (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی مجلس عاملہ کے اجلاس میں وزیر اعلی کی جانب سے کل قرض معافی کے مطالبے کو افراتفری پھیلانے کی سازش قرار دیے جانے کے 24 گھنٹے کے اندر شیوسینا نے وزیر اعلی کو گھیرنے کی کوشش کی ہے ۔شیوسینا نے الزام لگایا کہ اب تک ایک بھی کسان کی قرض معافی نہیں ہوئی ہے . شیوسینا بھون میں ادھو ٹھاکرے نے ایک پریس کانفرنس میں انتشار اوقرض معافی کے معاملے پر حکومت کی جم کر کھنچائی کی۔ ادھو نے کہا حکومت کہہ رہی ہے کہ اس نے جو قرض معافی دی ہے اس سے ریاست کے 40 لاکھ کسانوں کے زرعی قرض آزاد ہو جائیں گے ۔حکومت یہ بھی کہہ رہی ہے کہ اس قرض معافی کا فائدہ 89 لاکھ کسانوں کو ہوگا. ہم چاہتے ہیں حکومت قرض مفت ہونے والے 40 لاکھ کسانوں اور قرض نجات سے فائدہ ہونے والے 89 لاکھ کسانوں کے نام اور پتے اسمبلی میں پیش کریں۔ شیوسینا سطح پر حکومت کی طرف سے دی گئی فہرست کی توثیق کرائے گی۔ ادھو ٹھاکرے نے چٹکی لیتے ہوئے کہا کہ اس میں کوئی بری چیز نہیں ہے ۔ اگر حکومت کی فہرست کو سچ ثابت کر دکھایا تو اس سے حکومت کے تئیں ایمانداری ہی بڑھے گی۔ادھو نے کہا کہ وزیر اعلی کسانوں کی کل قرض مفت کو افراتفری کی سازش بتا رہے ہیں لیکن حقیقی افراتفری تو ملک میں پھیلی ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT