Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / زچہ بچہ کیلئے منفرد نوعیت کی اسکیم زیرغور

زچہ بچہ کیلئے منفرد نوعیت کی اسکیم زیرغور

ٹاملناڈو کے طرز پر 15 ہزار روپئے اور ’’ کے سی آر کٹ‘‘ کی فراہمی
حیدرآباد ۔ /17 جنوری (سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت سرکاری ہاسپٹلس میں زچگی کی حوصلہ افزائی کیلئے ’’زچہ بچہ ‘‘ کی نئی اسکیم متعارف کرانے پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے ۔ حاملہ خواتین کو 15 ہزار روپئے پیش کرنے کے علاوہ ’’ کے سی آر کٹ ‘‘ فراہم کرنے کا جائزہ لیا جارہا ہے ۔ ریاستی وزیر صحت لکشما ریڈی نے میڈیکل اینڈ ہیلت عہدیداروں کا اجلاس طلب کرتے ہوئے اخراجات پر مبنی رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت دی ہے تاکہ آئندہ ماہ منعقد ہونے والے اسمبلی بجٹ سیشن میں اعلان کیا جاسکے۔ خانگی و کارپوریٹ ہاسپٹلس میں زچگی کیلئے بلا ضرورت آپریشن کی حکومت کو شکایتیں وصول ہورہی ہیں ۔ اس کی روک تھام اور سرکاری ہاسپٹلس میں زچگی کو  یقینی بنانے کیلئے حکومت نے ترغیبات دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ اِس ضمن میں خاتون آئی اے ایس عہدیداروں نے ٹاملناڈو میں جاری اسکیم کا جائزہ لے کر حکومت کو رپورٹ پیش کردی ہے ۔ تاملناڈو میں زچہ بچہ اسکیم پر حکومت کی جانب سے 12 ہزار روپئے معاوضہ دیا جارہا ہے ۔ اماں کٹ کے نام سے نومولود بچہ اور اس کی ماں کیلئے 16 ضروری اشیاء فراہم کی جارہی ہیں ۔ ریاستی وزیر صحت لکشما ریڈی نے اعلیٰ عہدیداروں کو ٹاملناڈو سے بھی بہتر اسکیم اور اس پر ہونے والے اخراجات پر رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ تلنگانہ حکومت حاملہ خاتون کو بچے کی پیدائش تک تین قسطوں میں 15 ہزار روپئے نذرانہ عطا کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ خاتون کے حاملہ ہونے کے پہلے تین ماہ میں 5 ہزار روپئے ، زچگی کے بعد 5 ہزار روپئے اور بچہ کی ٹیکہ اندازی اور دیگر ضروریات کیلئے 5 ہزار روپئے اس طرح جملہ 15 ہزار روپئے دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ اس کے علاوہ زچہ بچہ کیلئے 30 اشیاء پر مشتمل ایک کٹ بھی دی جائے گی جس کو ’’کے سی آر کٹ‘‘ کے نام سے متعارف کرانے پر غور کیا جارہا ہے ۔ واضح رہے کہ نوٹ بندی کے 50 دن مکمل ہونے کے بعد وزیراعظم نریندر مودی نے بچہ کی پیدائش پر 6 ہزار روپئے دینے کا اعلان کیا ہے  جبکہ تاملناڈو حکومت 12 ہزار روپئے معاوضہ دے رہی ہے ۔ اگر کے سی آر اس اسکیم کا اعلان کرتے ہیں تو تلنگانہ ملک کی پہلی ریاست ہوگی جو اس پر عمل آوری کرے گی ۔

TOPPOPULARRECENT