Tuesday , October 17 2017
Home / خواتین کا صفحہ / زیرہ صرف مسالہ نہیں، دوا بھی ہے

زیرہ صرف مسالہ نہیں، دوا بھی ہے

زیرہ، ایک خوشبودار پودے کا خوشبودار بیج ہے۔ مسالے کے طور پر سیاہ زیرے سے زیادہ سفید زیرہ ہمارے باورچی خانوں میں عام استعمال ہوتا ہے اور قدیم زمانے سے ان بیجوں کو مشرقی دواؤں میں بھی استعمال کیا جارہا ہے۔ بدہضمی کی شکایات دور کرنے اور جراثیم کش کے طور پر ان کی افادیت تسلیم کی جاتی ہے۔ زیرے میں آئرن کی وافر مقدار سے جگر کی کارکردگی بہت بہتر ہوجاتی ہے۔ بد ہضمی کے علاوہ دست، متلی اور حاملہ خواتین کی اُلٹی کی شکایات رفع کرنے کیلئے بھی ان کو استعمال کیا جاتا ہے۔چونکہ زیرے میں جراثیم کش خوبیاں بھی پائی جاتی ہیں لہذا سیاہ زیرے کو پیس کر اس کی لیپ زخم اور پھوڑوں پر لگانے سے مرہم جیسے فوائد حاصل کئے جاسکتے ہیں۔ اگر کوئی بیماری نہ ہو تو بھی زیرے کا عرق جسمانی طاقت کی بحالی میں ٹانک کا کردار ادا کرتا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ زیرے کے استعمال سے جسم کی گرمی بڑھ جاتی ہے جس سے جسم میں غذا کے انجذاب کا عمل بہتر ہوجاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT