Friday , September 22 2017
Home / جرائم و حادثات / ساؤتھ زون میں 105 افراد کے خلاف روڈی شیٹس

ساؤتھ زون میں 105 افراد کے خلاف روڈی شیٹس

حیدرآباد ۔ /6 اپریل (سیاست نیوز) ساؤتھ زون پولیس نے مختلف جرائم میں ملوث ہونے والے افراد کے خلاف 105 نئے روڈی شیٹس کھول دی ہیں ۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ساؤتھ زون مسٹر وی ستیہ نارائینا نے بتایا کہ ساؤتھ زون میں لا اینڈ آرڈر کی برقراری اور عوام کے تحفظ کو اولین ترجیح دیتے ہوئے خواتین ، بچوں اور نظم و نسق میں خلل پیدا کرنے والے افراد کے خلاف جملہ 131 ہسٹری شیٹس کھولی گئی ہیں جن میں 105 روڈی شیٹس ، 25 سسپیکٹس شٹس اور ایک سی ڈی سی شیٹ شامل ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ پرانے شہر میں وقفہ وقفہ سے کارڈن سرچ آپریشنس کئے جارہے ہیں اور مسلسل جرائم میں ملوث ہونے پر کئی افراد کے خلاف پی ڈی ایکٹ جیسے سخت قوانین کا بھی استعمال کیا گیا ہے ۔ جرائم پر قابو پانے اور لا اینڈ آرڈر کی برقراری کیلئے ساؤتھ زون پولیس نے قتل ، اقدام قتل ، خواتین کے خلاف جرائم اور غیرقانونی طور پر فینانس کے کاروبار میں ملوث افراد کی تفصیلات کا جائزہ حاصل کرتے ہوئے ان کے خلاف روڈی شیٹس کھولنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ مسٹر ستیہ نارائینا نے بتایا کہ اگست 2015 ء میں 12 سالہ کمسن بچی کی عصمت ریزی اور قتل میں ملوث سید دستگیر کے خلاف ہسٹری شیٹ کھولی گئی ہے جبکہ میرچوک پولیس نے ماردھاڑ کے واقعہ میں ملوث حسن بن ابراہیم الجابری ، محمد علی صدیقی کے خلاف روڈی شیٹ کھولی گئی ہے ۔ اسی طرح 4 سالہ کمسن بچی سے نازیبا حرکت میں ملوث 46 سالہ محمد اکرم خان ساکن پھول باغ چونے کی بھٹی کے خلاف روڈی شیٹ کھولی گئی ہے ۔ مئی 2015 ء میں اسٹریٹ فائیٹ کے نام پر نبیل نامی طالبعلم کو ہلاک کرنے میں ملوث اویس پٹیل ، مرزا عمر علی بیگ ، وسیم خان ، مرزا نثار اللہ بیگ ، محمد عبدالقوی ، محمد سلیمان الدین اور عرفان پٹھان کے خلاف بھی روڈی شیٹس کھولی جاچکی ہے ۔ دبیر پورہ پولیس نے بھی 17 سالہ کم عمر بیٹی کے اغواء اور عصمت ریزی میں ملوث سید محمد حیدر عرف نواب کے خلاف بھی روڈی شیٹ کھولی گئی ہے ۔ مسٹر ستیہ نارائینا نے بتایا کہ ساؤتھ زون سے اب تک 47 افراد کو پی ڈی ایکٹ کے تحت جیل بھیجا جاسکتا ہے اور مزید 20 افراد کے نام پی ڈی ایکٹ کیلئے زیرغور ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ مزید 100 روڈی شیٹس کھولنے کیلئے بھی تیاریاں جاری ہیں جبکہ اچھے کردار اور برتاؤ کے علاوہ ضعیف عمر کو مدنظر رکھتے ہوئے کئی روڈی شیٹس بھی بند کردی گیئں ہیں ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT