Saturday , September 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / سائنا، سریکانت مظاہروں میں استقلال کیلئے کوشاں

سائنا، سریکانت مظاہروں میں استقلال کیلئے کوشاں

شاہ عالم ، 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سرکردہ ہندوستانی شٹلرز بشمول سائنا نہوال اور کیدمبی سریکانت اپنے کھیل میں جو کچھ بھی معمولی سہی، خامیاں ہیں، اُن پر قابو پانے کی سعی کریں گے، جب اُن کی مہم 550,000 ملائیشیا اوپن میں شروع ہوگی۔ اس ایونٹ کا کل یہاں کوالیفائرز کے ساتھ آغاز ہورہا ہے۔ سخت مقابلے جیتنے میں ناکامی ہی ہے جس نے انڈین شٹلرز کے پرفارمنس پر داغ لگادیا اور وہ اس خامی کو سوپر سیریز پریمیر ایونٹ کے دوران دور کرلینا چاہیں گے، جس کا مین ڈرا چہارشنبہ کو شروع ہوگا۔ سائنا انجری سے سنبھلنے کے بعد انڈیا اوپن میں اپنے ٹائٹل کا دفاع نہیں کرپائی۔ اس نے سامی فائنلس میں لی ژویری کے خلاف اچھا کھیلا لیکن فیصلہ کن گیم میں دو کلیدی پوائنٹس نے اُن کی مہم ختم کردی۔ 26 سالہ اسٹار بلاشبہ اپنی خامیوں کو دور کرلینا چاہیں گی جب وہ اوپننگ راؤنڈ میں نیچاؤن جنڈاپول کے ساتھ مسابقت کریں گی۔ سائنا اس تھائی لڑکی کو پانچ مرتبہ ہرایا ہے، جن میں انڈیا اوپن میں سکنڈ راؤنڈ کی جیت شامل ہے۔ سائنا نے کہا تھا: ’’میں (کھیل کا) بہتر تجزیہ کرپا رہی ہوں۔ لیکن انجری کی وجہ سے میچ پریکٹس کم ہوئی۔ جب آپ زخم سے بحال ہوکر اس طرح کے سخت حریفوں کے خلاف کھیلتے ہیں، آپ کو سب کچھ نیا معلوم ہوتا ہے۔ میں نے دو ٹورنمنٹس کھیلے اور میری کارکردگی اچھی رہی لیکن یہاں میں نے بہتر کھیلا؛ آپ کو اس طرح کا کھیل زیادہ سے زیادہ پیش کرتے رہنا پڑتا ہے۔ ‘‘ دوسری طرف سریکانت گزشتہ سال اپنی انڈیا اوپن جیت کے بعد سے کسی بھی سوپر سیریز ایونٹ کا سکنڈ راؤنڈ تک عبور نہیں کیا ہے۔ گزشتہ ہفتے اوپننگ راؤنڈ میں اُن کی ناکامی کا اُن کی رینکنگ پر اثر پڑے گا اور اُن کی اولمپک کوالیفکیشن خطرہ میں پڑسکتی ہے۔ ہندوستانی اسٹار ابتدائی مقابلے میں تھائی لینڈ کے بونساک پونسانا سے کھیلیں گے، جن کے خلاف وہ 3-1 کا بہتر ریکارڈ رکھتے ہیں۔ ورلڈ چمپئن شپ میں دو مرتبہ کی برونز میڈلسٹ پی وی سندھو کو بھی مطلوبہ نتائج نہیں حاصل ہورہے ہیں حالانکہ بھرپور کوشش کی ہے۔ وہ گزشتہ چند ماہ میں سات مختلف حریفوں سے ہار چکی ہے اور اب چند بڑی کامیابیوں کیلئے بے قرار ہوں گی۔ اُن کا پہلا میچ چین کی بینگ جیاؤ کے خلاف مقرر ہے۔ اس عالمی نمبر 18 کھلاڑی کے مقابل ابھی تک اپنے دونوں مقابلے ہاری، اس لئے چہارشنبہ کو انتقامانہ کامیابی چاہیں گی۔ اس ٹورنمنٹ کے مختلف زمروں میں ہندوستان کے دیگر کھلاڑی بھی حصہ لے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT