Tuesday , April 25 2017
Home / ہندوستان / ساتھیوں کی معطلی کیخلاف ایمس میں جزوی احتجاج

ساتھیوں کی معطلی کیخلاف ایمس میں جزوی احتجاج

نئی دہلی۔ 7 فروری (سیاست ڈاٹ کام) اے آئی آئی ایم ایس ریسیڈنشیل ڈاکٹرس اسوسی ایشن آج انتظامیہ کی جانب سے پانچ ریسیڈنٹ ڈاکٹر کی معطلی کی تنسیخ سے اتفاق نہ کرنے کے خلاف جزوی طور پر ہڑتال کردی۔ ان ڈاکٹروں کو ایک نرس کی مبینہ طور پر لاپرواہی کی وجہ سے ہلاکت واقع ہونے پر معطل کردیا گیا تھا۔ اسوسی ایشن نے دھمکی دی کہ معطلی کے احکام اگر آئندہ 24 گھنٹوں میں واپس نہ لئے جائیں تو ہنگامی حالات اور سنگین حالات میں دیکھ بھال کی خدمات معطل کردی جائیں گی۔ ڈائریکٹر کے نام اپنے مکتوب میں اسوسی ایشن نے کہا کہ ان کے انتظامیہ کے ساتھ اجلاس اور نرسنگ یونین کی کل نمائندگی کے بعد فیصلہ کیا گیا تھا  کہ پانچ متعلقہ ڈاکٹروں کی معطلی کو فوری طور پر منسوخ کردیا جائے گا لیکن افسوس ہے کہ انتظامیہ نے اپنے تیقن سے دستبرداری اختیار کرلی اور نرسنگ یونین کے دباؤ کے تحت اس نے ڈاکٹروں کی معطلی منسوخ نہیں کی۔ مکتوب میں کہا گیا ہے کہ اگر انتظامیہ اسی طرح دباؤ کے آگے جھکتا رہے اور اپنا غلط موقف برقرار رکھے تو موجودہ حالات میں ہمارے پاس تمام آؤٹ ڈور اور اِن ڈور مریضوں کی دیکھ بھال کی خدمات فوری معطل کرنے کے سواء کوئی اور متبادل باقی نہیں رہا ہے۔ ہم نے کہہ دیا ہے کہ اگر آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران منصفانہ کارروائی نہ کی جائے تو ہم ہنگامی اور سنگین مریضوں کی دیکھ بھال کی خدمات 8 فروری 8 بجے صبح سے بند کردینے پر مجبور ہوجائیں گے۔ اسوسی ایشن نے مزید کہا کہ حالانکہ مریضوں کی دیکھ بھال جاری رکھی جائے گی۔ اگر وہ دواخانہ میں شریک ہوں لیکن ایسے امکانی معمولی ردعمل پر ہم ایسا کرنا جاری نہیں رکھ سکتے۔ کل ایمس کے انتظامیہ نے پانچ ریسیڈنٹ ڈاکٹرس کی معطلی کے احکام کا فیصلہ منسوخ کرنے کا نرسیس یونین کے موقف تبدیل کرنے کے چند ہی منٹ کے اندر تبدیل کردیا تھا۔ 8 رکنی کمیٹی نے مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے حاملہ نرس کی موت کی تردید کی۔8 رکنی کمیٹی کا اجلاس ڈاکٹر ایس سی شرما کی زیرصدارت منعقد ہوا تھا۔ نرسیس کی یونین نے متعلقہ ڈاکٹروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے ہڑتال کی دھمکی دی تھی جس کے بعد 5 ڈاکٹروں نے اتوار کے دن معطل کردیا گیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT