Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / سادھوی پرگیہ ٹھاکر کیخلاف الزامات سے دستبرداری کا شاخسانہ

سادھوی پرگیہ ٹھاکر کیخلاف الزامات سے دستبرداری کا شاخسانہ

این آئی اے اعتبار اور اعتماد سے محروم ، عام آدمی پارٹی کا الزام
نئی دہلی 14 مئی (سیاست ڈاٹ کام) عام آدمی پارٹی نے سال 2008 ء کے مالیگاؤں بم دھماکہ کیس میں سادھوی پرگیہ ٹھاکر کے خلاف الزامات سے دستبرداری کے پیش نظر قومی تحقیقاتی ادارہ (این آئی اے) کے اعتبار پر سوالیہ نشان لگایا ہے اور یہ الزام عائد کیا ہے کہ بی جے پی ملک کی اہم انسداد دہشت گردی ادارہ کو کمزور کررہی ہے۔ عاپ نے مہاراشٹرا اے ٹی ایس سربراہ ہیمنت کرکرے کے رول پر انگشت نمائی کرنے پر این آئی اے اور بی جے پی کو تنقید کا نشانہ بنایا جوکہ سادھوی پرگیہ ٹھاکر اور کرنل شری کانت پروہت کی گرفتاری کے وقت اے ٹی ایس کے سربراہ تھے اور ان کی تحقیقات پر شک و شبہ ظاہر کرنے پر معذرت کا مطالبہ کیا۔ عام آدمی پارٹی لیڈر آشیش کیتھان نے بتایا کہ ہیمنت کرکرے کے بارے میں شک و شبہات ظاہر کرنے پر بی جے پی اور این آئی اے کو معافی مانگنا چاہئے جنھوں نے قوم کے لئے اپنی جان نچھاور کردی تھی اور طویل عرصہ تک جاسوسی ادارہ ریسرچ اینڈ انالیسنگ ونگ میں خدمات انجام دی تھیں اور ان کی دیانتداری اور فرض شناسی شک و شبہ سے بالاتر ہے۔ واضح رہے کہ ہیمنت کرکرے، 2008 ء میں ممبئی پر حملے کے دوران لڑتے ہوئے شہید ہوگئے تھے اور انھیں 26 جنوری 2009 ء میں اشوک چکرا بعد از مرگ عطا کیا گیا تھا۔ دائیں بازو گروپس سے متعلق تحقیقات میں این آئی اے ڈائرکٹر جنرل شرد کمار کے رول پر شبہ ظاہر کرتے ہوئے عاپ لیڈر نے مطالبہ کیاکہ اس کیس میں 49 گواہوں کو انحراف کی ترغیب دینے کے لئے 4 کروڑ روپئے کے خفیہ فنڈ کے استعمال کی تحقیقات کروائی جائے اور کہاکہ تحقیقاتی ادارہ اپنا اعتبار اور اعتماد کھودیا ہے۔ انھوں نے الزام عائد کیاکہ قبل ازیں سی بی آئی کو پنجرہ میں بند طوطا قرار دیا گیا اور این آئی اے کا حشر بھی ایسا ہی ہوگیا ہے۔ شرد کمار کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے آشیش کیتھان نے کہاکہ این آئی اے سربراہ وظیفہ پر سبکدوشی کے باوجود کنٹراکٹ پر بازمامور ہوگئے جوکہ آئی پی ایس قواعد و ضوابط کے مغائر ہے۔ انھوں نے الزام عائد کیاکہ پیشرو کانگریس کی زیرقیادت یو پی اے اور اب بی جے پی دہشت گردی کے کیسوں کو سیاسی رنگ دے رہے ہیں۔

 

سادھوی کی گرفتاری میں کانگریس کی دغا بازی : یوگی آدتیہ
گورکھپور (اترپردیش) 14 مئی (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے ایم پی یوگی آدتیہ ناتھ نے آج 2008 ء کے مالیگاؤں بم دھماکہ کیس میں سادھوی پرگیہ ٹھاکر کو بری کئے جانے پر خیرمقدم کیا ہے اور یہ الزام عائد کیا کہ ان کی گرفتاری میں کانگریس نے ’دغا باز‘ کا رول ادا کیا ہے۔ انھوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ سادھوی پرگیہ ٹھاکر کی گرفتاری میں کانگریس کا رول ’دغابازی‘ کے مترادف ہے۔ جبکہ سمجھوتہ اکسپریس دھماکہ کی تحقیقات میں این آئی اے اور اے ٹی ایس کا رول بھی اسی طرح کا رہا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT