Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / ساری ہندوستانی قیادت فلسطینی کاز کیلئے پابند عہد

ساری ہندوستانی قیادت فلسطینی کاز کیلئے پابند عہد

RAMALLAH, JAN 17 :- Palestinian President Mahmoud Abbas (R) meets with Indian Foreign Minister Sushma Swaraj in the West Bank city of Ramallah January 17, 2016. REUTERS/UNI PHOTO-36U

سشما سوراج کی صدر محمود عباس سے ملاقات ، ہندوستان ہمارا دوست ہی نہیں بھائی بھی ہے : صدر فلسطین
رملہ ۔ /17 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) وزیر امور خارجہ سشما سواراج نے آج کہا کہ ساری ہندوستانی قیادت فلسطینی کاز کیلئے پابند عہد ہے ۔ جبکہ فلسطین نے مغربی ایشیاء امن پیشرفت میں ہندوستان سے حصہ لینے کی خواہش ظاہر کی تھی تاکہ علاقہ میں بحران کو کم کرنے میں مدد مل سکے ۔ سشما سواراج نے آج دورہ مغربی ایشیاء کے موقع پر فلسطین کی اعلیٰ قیادت سے ملاقات کی اور فلسطینی کاز کیلئے ہندوستان کی مستقل تائید کے عہد کا اعادہ کیا ۔ سشما سوراج کا استقبال فلسطین کے نائب وزیرخارجہ برائے ایشیاء سفیر ماذن شامیا نے بٹونیا چوکی  پر کیا۔  جب کہ وہ اسرائیل کی سرحد پار کر کے فلسطین میں داخل ہوئیں۔ انہوں نے صدر محمود عباس سے ملاقات کی اور ہند۔فلسطین ڈیجیٹل لرننگ اینڈ اننوویشن سنٹر کا القدوس یونیورسٹی میں افتتاح بھی کیا ۔ محمود عباس نے ہندوستان کو نہ صرف ایک دوست بلکہ ایک بھائی قرار دیا اور فلسطینی کاز کیلئے ہندوستان کی تائید کی ستائش کی ۔ انہوں نے سشما سواراج کیلئے ظہرانہ بھی ترتیب دیا تھا ۔

انہوں نے مہاتما گاندھی کے مجسمہ پر پھول چڑھاکر خراج عقیدت پیش کیا ۔ وزیر خارجہ فلسطین نے ہندوستانی وزیر خارجہ پر زور دیا کہ فلسطینی کاز کی تائید جاری رکھی  جائے ۔ انہوں نے ہندوستان کی جانب سے کئی شعبوں میں باہمی تعاون میں مدد پر اظہار اطمینان کیا ۔ سشما سوراج نے پُرزور انداز میں کہاکہ فلسطین کے مسئلہ پر ہندوستان کا موقف تبدیل نہیں ہوا ہے ۔ انہوں نے دونوں فریقین کے درمیان مستحکم تعلقات پر اظہار اطمینان کیا ۔ وزارت خارجہ فلسطین کے سربراہ برائے ذرائع ابلاغ ڈاکٹر وائل البتریقی نے کہا کہ فلسطینیوں نے حیرت ظاہر کی تھی جب کہ ہندوستان نے اقوام متحدہ کے فورم میں گذشتہ سال رائے دہی میں حصہ نہیں لیا تھا ۔ تاہم بعدازاں کہا کہ ہندوستان کے اصولی موقف کو فلسطین سمجھتا ہے ۔ ہندوستان گذشتہ سال پہلی بار رائے دہی کے دوران غیر حاضر رہا تھا جب کہ فلسطینی قرارداد اقوام متحدہ کے شعبہ انسانی حقوق میں منظور کی گئی تھی جس کے ذریعہ مطالبہ کیا گیا تھا کہ 2014ء کے غزہ میں تنازعہ میں ملوث فریقین کو جواب دہ بنایا جانا چاہیئے تاہم ہندوستان نے اپنا یہ موقف برقرار رکھا تھا کہ فلسطین کاز کی تائید کے اس کے دیرینہ موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے ۔ بتریقی نے کہا کہ تاہم ایسا کوئی مسئلہ وزرائے خارجہ کے اجلاس میں اٹھایا نہیں گیا۔ قبل ازیںسشماسوراج کو تل ابیب ایئرپورٹ پرکل شام اسرائیلی عہدیداروں نے سرخ قالین استقبال کیا تھا ۔ فلسطینیوں کے ساتھ بات چیت کے بعد سشما سوراج دو روزہ دورہ پر واپس اسرائیل چلی جائیں گی جہاں ان کی بات چیت کئی مسائل پر دونوں ممالک کے درمیان تعاون کے سلسلہ میں اسرائیل کی اعلیٰ سطی قیادت سے ہوگی۔

یاسر عرفات کو خراج عقیدت
وزیر امور خارجہ سشما سواراج نے فلسطینی رہنما یاسر عرفات کو بھرپور خراج عقیدت پیش کیا اور انہیں ’’ہندوستان کا دوست ‘‘ قرار دیا ۔ انہوں نے رملہ میں یاسر عرفات کی قبر پر پھول چڑھائے ۔
عراق میں لاپتہ 39 ہندوستانی محفوظ
اس دوران فلسطینی عہدیداروں نے بتایا کہ عراق میں گزشتہ کئی ماہ سے لاپتہ 39 ہندوستانی شہری محفوظ ہیں ۔ فلسطینی عہدیداروں نے وزیر امور خارجہ سشما سواراج کو بتایا کہ انٹلیجنس اطلاعات کے مطابق تمام 39 ہندوستانی موصل میں ہیں اور وہ محفوظ ہیں ۔ تاہم اس ضمن میں وہ کوئی ٹھوس ثبوت پیش نہیں کرسکے ۔ یہ قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ ان ہندوستانیوں کو آئی ایس نے اپنی تحویل میں رکھا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT