Wednesday , August 23 2017
Home / بچوں کا صفحہ / سال کے تین موسم

سال کے تین موسم

بچو ! سدادن ایک سے نہیں رہتے کبھی سخت گرمی پڑتی ہے ۔ تر تر پسینہ ٹپکتا ہے ۔ برف پینے ، سنترہ ککڑی اور کھیرا کھانے کو جی چاہتا ہے ۔ امی کے ہاتھ سے پنکھا ایک منٹ کیلئے بھی جدا نہیں ہوتا ۔ دھوپ میں نکلا نہیں جاتا ۔ گھاس پھوس اور پودے مرجھاجاتے ہیں ۔ تالاب کنڈ ، ندی ، نالے سب سوکھ جاتے ہیں ۔ ہوا میں آگ کی سی لپٹ ہوتی ہے ۔ دن بڑے اور راتیں چھوٹی ہونے لگتی ہیں ۔ رات میں نیند پوری نہیں ہوتی ۔
دن میں پسینے اور گرمی سے نیند نہیں آتی ۔ انسان جانور ، پنچھی ، پکھیر و سب پریشان ہوجاتے ہیں ۔ دھوپ سے بچنے اور سایہ کی تلاش میں پھرتے ہیں۔سب کی پریشانیاں دکھ کر اللہ میاں کو رحم آتا ہے ۔ تیز ہوائیں چلنے لگتی ہیں ۔ کالے کالے بادل اٹھتے اور رم جھم رم جھم پانی برسنے لگتا ہے ۔ ندی نالے کنڈ تالاب سب بھرجاتے ہیں ۔ تمام زمین ہری ہوجاتی ہے ۔ گھاس پھوس کی سوکھی جڑوں میں پانی پہنچتا ہے ۔ سب میں پھر سے جان آجاتی ہے ۔ کسان ہل بیل لے کر کھیت پہنچ جاتے ہیں ۔ دھان ، جوار ، مکئی وغیرہ بوتے ہیں ۔ آسمان پر اکثر بادل چھایا رہتا ہے ۔ کئی کئی دن تک برابر بارش ہوتی رہتی ہے ۔ مینڈک ٹراتے اور جھینگر سیٹی بجاتے ہیں ۔ گرمی میں دھوپ دیکھتے سوکھ جاتے تھے مگر اب بھیگ جائیں تو مشکل ہوجائے ۔ پسینہ بھی جلد نہیں سوکھتا ۔ بہت برا لگتا ہے ۔ ایندھن گیلا ہوجاتا ہے ۔ رفتہ رفتہ بارش کے دن ختم ہوجاتے ہیں ۔ اب سردی شروع ہوتی ہے ۔ سردی میں دن چھوٹے اور راتیں بڑی ہوتی ہیں ۔ سوتے سوتے جی اکتا جاتا ہے ۔ سردی کی وجہ سے ٹھٹھرے ہوئے لحافوں میں پڑے رہتے ہیں ۔ باہر نکلیں تو کڑ کڑ دانت بجتے ہیں ۔ سوٹر اور گرم کوٹ پہنیں تب کہیں سردی دور ہوتی ہے ۔ آگ اور دھوپ جو گرمی کے دنوں میں بری معلوم ہوتی تھیں ۔ اب اچھی لگتی ہیں ۔ دھوپ میں لیٹنے بیٹھنے کو جی چاہتا ہے ۔ ہاتھ پیر پھٹنے لگے ہیں ۔ وائسلین نہ لگائیں تو بڑی تکلیف ہوتی ہے ۔ گھی ، ناریل کا تیل وغیرہ جم جاتے ہیں ۔ گنے ، نئے گڑ ، اور مٹر کی پھلیوں کی بہار ہوتی ہے ۔ جاڑا ختم ہوکر پھر گرمی شروع ہوتی ہے ۔ یہ ہیں سال کے تین موسم ، گرمی ، برسات ، جاڑا ، یہ تینوں اسی ترتیب سے سال بھر آتے رہتے ہیں ۔ سدا ایک ہی موسم رہتا تو طبیعت اکتا جاتی ۔اللہ میاں کی مہربانی ہے جو اس طرح موسم بدلتے رہتے ہیں اور ہم روز نئی نئی بہاریں دیکھتے ہیں۔
٭٭٭٭٭

TOPPOPULARRECENT