Saturday , September 23 2017
Home / دنیا / سان فرانسسکو میں انتہا پسند دائیں بازو کا اجتماع

سان فرانسسکو میں انتہا پسند دائیں بازو کا اجتماع

ایک چھوٹے سے پارک میں احتجاجیوں کا اجتماع ‘ پولیس کا محاصرہ ‘ناخوشگوار واقعہ کے انسداد کیلئے اقدام
سان فرانسسکو ۔27اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک مجوزہ انتہا پسند دائیں بازو کا جلسہ عام گولڈن گیگ بریج کے زیر سایہ منعقد کیا جائے گا ۔ اس سلسلہ میں ایک پریس کانفرنس اور آج منعقد کی گئی ۔ جب کہ سان فرانسسکو کی آبادی ایک چھوٹے سے چمن میں جمع ہوگئی تھی ۔ حالانکہ کارکنوں نے اس کے اطراف رکاوٹیں کھڑا کردی تھیں ۔ ایک حب الوطنی کے دعائیہ گروپ نے اس کا مضافاتی علاقہ پسیفیکا میں اہتمام کیا تھا ۔ انتہا پسند دائیں بازو کو صرف چند حامیوں نے اس جلسہ عام میں شرکت کی ۔ جبکہ شہر کے قائدین اور پولیس نے بار بار اندیشوں کا اظہار کیا تھا ‘ کیونکہ جس برہمی کے جذبات کا جلسہ کے پوسٹرس سے اظہار ہوتا تھا اس سے ظاہر ہوتا تھا کہ اس علاقہ میں تشدد برپا ہوگا ۔ کیونکہ یہ آزادی تقریب تحریک کا مستحکم گڑھ سمجھا جاتا ہے ۔

جلسہ عام کے اہتمام کرنے والے جوئے گبسن نے گڑبڑ کا اندازہ کرتے ہوئے کیونکہ ان کے ارکان کو نامعلوم افراد کی جانب سے سماجی ذرائع ابلاغ پر دھمکیاں دی جارہی تھیں ۔ انہیں خوف تھا کہ شہری قائدین اور نفاذ قانون ادارے اُن کا تحفظ کرنے سے قاصر رہیں گے ۔ انہوں نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ تمام انتہا پسندوں سے نہیں بلکہ معمول کے شہریوں سے بھی انہیں بات چیت کرنے کی توقع نہیں ہے ۔ گبسن کو جاپانی نژاد امریکی کی حیثیت سے شناخت کیا جاتا ہے ۔ دیگر مقررین میں افریقی نژاد امریکی ‘ ایک لاطینی امریکی اور ایک سموعہ کا امریکی شامل تھے ۔ کئی افراد نے کہا کہ وہ ڈونالڈ ٹرمپ کی تائید کرتے ہیں اور اعتدال پسندوں کے جلوس میں شامل ہونے کی تائید میں ہیں تاکہ آزادی تقریر کی تفہیم میں اضافہ کیا جاسکے ۔ اس گروپ کے اہم افراد نے کہا کہ انہیں ایک ہزار سے زیادہ بائیں بازو کے مخالف احتجاجی افراد کی توقع نہیں ہے ۔ انہیں شبہ ہے کہ انتہا پسند دائیں بازو کے حامی اب بھی اپنی طاقت کا مظاہرہ کرنا چاہتے ہیں ۔ سان فرانسسکو بحیثیت مجموعی ایک فراخدل شہر ہے ۔ یہ نفرت کا مقام نہیں ہے اور نہ یہاں کے شہریوں کے دل میں کسی قسم کا تعصب ہے ۔ پولیس نے آج علی الصبح چمن عوام کیلئے بند کردیا تھا اور وہ انسداد فسادات لباس میں تعینات تھے ۔ انہوں نے چمن میںجمع ہونے والے تمام احتجاجیوں کا محاصرہ کرلیا تھا تاکہ کسی بھی قسم کے ناخوشگوار واقعہ کا انسداد کیا جاسکے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT