Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / سدھیر کمیشن آف انکوائری کے مشاورتی بورڈ کا اجلاس

سدھیر کمیشن آف انکوائری کے مشاورتی بورڈ کا اجلاس

ماہرین کی شرکت، مسلمانوں کی پسماندگی پر تجاویز کی پیشکشی
حیدرآباد۔/5فبروری، ( سیاست نیوز) مسلمانوں کی تعلیمی، معاشی اور سماجی پسماندگی کا جائزہ لینے والی سدھیر کمیشن آف انکوائری کے مشاورتی بورڈ کا اجلاس آج حیدرآباد میں منعقد ہوا۔ کمیشن کے صدرنشین جی سدھیر ریٹائرڈ آئی اے ایس نے صدارت کی جس میں کمیشن کی جانب سے حاصل کردہ تفصیلات اور سنٹر فار گڈ گورننس کے سیمپل سروے کا جائزہ لیا گیا۔ اڈوائزری بورڈ کا یہ دوسرا اجلاس تھا۔ کمیشن کے قیام کے بعد سے آج تک مسلمانوں کی صورتحال کے بارے میں جو اعداد و شمار جمع کئے گئے ہیں انہیں اجلاس میں پیش کیا گیا۔ کمیشن نے مختلف شعبوں کے ماہرین کو اپنی اسٹڈی رپورٹ پیش کرنے کی ذمہ داری دی تھی جنہوں نے آج کمیشن میں اپنی رپورٹ داخل کی۔ اس موقع پر اڈوائزری بورڈ کے ارکان نے مختلف تجاویز پیش کیں۔ پروفیسر امیتابھ کونڈو نے ایک سیشن کی صدارت کی اور تجویز پیش کی کہ جو اسٹڈی پیپرس داخل کئے گئے ہیں ان کا مزید جائزہ لیا جائے گا تاکہ کمیشن کو رپورٹ پیش کرنے میں سہولت ہو۔ انہوں نے سروے رپورٹس کا مختلف زاویوں سے جائزہ لینے کی تجویز پیش کی۔ پروفیسر فیضان مصطفی نلسار یونیورسٹی اور پروفیسر سلیمان صدیقی سابق وائس چانسلر عثمانیہ یونیورسٹی نے کمیشن کو تجاویز پیش کرتے ہوئے اسے رپورٹ میں شامل کرنے کا مشورہ دیا۔مسلمانوں کی سماجی اور تعلیمی پسماندگی کا جائزہ لینے کیلئے مزید اعداد و شمار جمع کرنے اور تحفظات سے متعلق عدالتوں میں زیر دوراں مقدمات کا جائزہ لینے کی تجویز پیش کی گئی۔ تلنگانہ میں مسلمانوں کی ترقی کے اقدامات کے سلسلہ میں ایک پیانل مباحثہ کا اہتمام کیا گیا۔ اجلاس میں ایم اے باری، ڈاکٹر عامر اللہ خاں، ڈاکٹر عبدالشعبان ارکان کمیشن آف انکوائری کے علاوہ سومیش کمار آئی اے ایس پرنسپل سکریٹری بی سی ویلفیر، شریمتی جی ڈی ارونا آئی اے ایس کمشنر بی سی ویلفیر، ایم جے اکبر ڈائرکٹر اقلیتی بہبود، بی شفیع اللہ منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن اور دوسروں نے شرکت کی۔ جی سدھیر صدرنشین نے تمام شرکاء سے اظہار تشکر کیا جنہوں نے کمیشن کی رپورٹ کی تیاری کے سلسلہ میں تعاون کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT