Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / سدھیر کمیشن کی میعاد میں ایک ماہ توسیع کا فیصلہ

سدھیر کمیشن کی میعاد میں ایک ماہ توسیع کا فیصلہ

حیدرآباد۔/13ڈسمبر، ( سیاست نیوز) مسلمانوں کی تعلیمی، معاشی اور سماجی پسماندگی کا جائزہ لینے کیلئے قائم کردہ سدھیر کمیشن آف انکوائری کی میعاد میں مزید ایک ماہ کی توسیع کی جائے گی۔ تلنگانہ حکومت نے ایک ماہ کی توسیع کا فیصلہ کیا تاکہ کمیشن آف انکوائری مسلمانوں کو تحفظات کے مسئلہ پر رپورٹ کی تیاری میں بی سی کمیشن سے تعاون کرے۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ایک ماہ کی توسیع کی منظوری دیتے ہوئے فائیل کو محکمہ اقلیتی بہبود روانہ کیا ہے اور توقع ہے کہ جلد ہی باقاعدہ احکامات جاری کردیئے جائیں گے۔ سدھیر کمیشن کی میعاد جاریہ ماہ کے اختتام پر ختم ہورہی تھی۔ واضح رہے کہ ریٹائرڈ آئی اے ایس عہدیدار جی سدھیر کی قیادت میں 3 مارچ 2015 کو کمیشن آف انکوائری قائم کیا گیا تھا۔ کمیشن کے ارکان میں عامر اللہ خان، پروفیسر عبدالشعبان اور ایم اے باری شامل تھے۔ کمیشن کو 6 ماہ کے اعتبار سے دو مرتبہ توسیع دی گئی اور تیسری مرتبہ 3 ماہ کی توسیع دی گئی تھی۔ کمیشن نے 18 ماہ کی اپنی کارکردگی میں 15 ماہ میں حکومت کو اپنی رپورٹ پیش کردی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر تلنگانہ حکومت مسلم تحفظات کے بارے میں سنجیدہ ہے تو اسے کمیشن کی میعاد میں کم از کم 3 ماہ کی توسیع دی جانی چاہیئے تھی کیونکہ بی سی کمیشن میں کوئی بھی ماہر موجود نہیں ہے اور نہ ہی کمیشن میں کوئی مسلم رکن کو شامل کیا گیا۔ ایسے وقت جبکہ بی سی کمیشن مسلم تحفظات کے مسئلہ پر عوامی سماعت کا آغاز کرنے جارہا ہے، سدھیر کمیشن آف انکوائری کی موجودگی سے اسے کافی مدد مل سکتی ہے۔ حالیہ دنوں بی سی کمیشن کے صدرنشین اور ارکان نے سدھیر کمیشن سے ملاقات کی اور ان کی رپورٹ اور سروے کی تفصیلات حاصل کی تھیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT