Thursday , October 19 2017
Home / Top Stories / سرجیکل حملے اور نوٹ بندی دو تاریخی اقدامات : امیت شاہ

سرجیکل حملے اور نوٹ بندی دو تاریخی اقدامات : امیت شاہ

نئی دہلی ۔ 6 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے مجوزہ اسمبلی انتخابات کو ملحوظ رکھتے ہوئے نوٹ بندی کو ایک اہم کارنامہ کے طور پر پیش کیا اور دعویٰ کیا کہ ان کی پارٹی نے کانگریس اور دیگر جماعتوں سے ’’غریبوں کی تائید‘‘ کا نعرہ چھین لیا ہے کیونکہ غریب اب وزیراعظم نریندر مودی کی تائید کررہے ہیں۔ امیت شاہ نے واضح کردیا کہ لائن آف کنٹرول پر کئے گئے سرجیکل حملے اور نوٹ بندی بی جے پی کے دو اہم انتخابی موضوعات ہوں گے۔ بی جے پی کے صدر نے ان دونوں فیلوں کو تاریخی قرار دیا اور دعویٰ کیا کہ نوٹ بندی کے فیصلہ کے نتیجہ میں سرکاری آمدنی میں اضافہ ہوگا جو مواقف غریب فلاحی اقدامات پر صرف کی جائے گی۔ امیت شاہ نے بی جے پی کی قومی عاملہ کے افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے نوٹ بندی کے مخالفین کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ قبل ازیں وہ یہ سوال کیا کرتے تھے کہ کالے دھن کے خلاف حکومت نے کیا قدم اٹھایا ہے اور اب یہ پوچھ رہے ہیں کہ اس (حکومت) نے یہ فیصلہ کیوں کیا ہے۔ ’’ان کے سوال میں کیا سے کیوں کے استعمال نے انہیں (اپوزیشن کو) بے نقاب کردیا ہے‘‘۔ امیت شاہ نے دعویٰ کیا کہ بی جے پی کو تمام پانچ ریاستوں اترپردیش، پنجاب، اتراکھنڈ، گوا اور منی پور میں کامیابی ہوگی۔ ستمبر کے دوران کوزی کوڈ میں منعقدہ بی جے پی کے قومی عاملہ کے گذشتہ اجلاس کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس کے قائدین نے اری دہشت گرد حملہ پر دکھ محسوس کیا تھا۔ امیت شاہ نے کہا کہ ہندوستان نے پہلی مرتبہ اس قسم کا سرجیکل حملہ کیا۔ ساری دنیا میں ہندوستان کی طاقت اور استحکام کی ستائش کی ہے۔ یہ ایک عظیم بہادری کی مثال ہے۔ یہ سرجیکل حملہ دراصل دہشت گردی کے خلاف ہندوستان کا جواب تھا۔ بی جے پی کی ہمیشہ یہی پالیسی رہی ہیکہ دہشت گردی کے تئیں کوئی مروت نہ کی جائے اور اس پالیسی کے مطابق کام کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT