Wednesday , September 20 2017
Home / پاکستان / سرحدپار دراندازی کا ہندوستانی دعویٰ مسترد : پاکستان

سرحدپار دراندازی کا ہندوستانی دعویٰ مسترد : پاکستان

اسلام آباد ۔10اگسٹ(سیاست ڈاٹ کام) پاکستان نے کشمیر میں دراندازی کے تعلق سے ہندوستان کا الزام مسترد کردیا ہے ، جبکہ اس کے قاصد عبدالباسط کو طلب کرتے ہوئے سرحدپار دہشت گردی کے بارے میں پاکستان کی مسلسل تائید و حمایت پر سخت احتجاجی مکتوب حوالے کیا گیاتھا ۔ دفتر خارجہ نے کل شب ایک بیان میں کہا کہ ہم ایل او سی کے پار کسی بھی قسم کی دراندازی سے متعلق ہندوستانی دعوے کو سختی سے مسترد کرتے ہیں ، پاکستان بدستور اپنی اس پالیسی پر قائم ہے کہ کسی کے بھی خلاف کوئی دہشت گردانہ سرگرمی کیلئے اپنے علاقہ کو استعمال کرنے کی اجازت نہ دی جائے ۔ اُن کا بیان اس استفسار پر ردعمل ہے جو پاکستانی ہائی کمشنر کو ہندوستان میں طلب کئے جانے سے متعلق کیا گیا ۔ دفتر خارجہ نے کہا کہ ہندوستانی دعوے کی صداقت کو جاننے کی ضرورت ہے، اس ضمن میں تفصیلات اکٹھا کی جائیں گی ۔ باہمی روابط میں بڑھتی ہوئی تلخی کے درمیان ہندوستان نے کل باسط کو طلب کیا اور پاکستان کی سرحدپار دہشت گردی کو مسلسل مدد پر احتجاجی مکتوب حوالے کیا اور الزام عائد کیا کہ وہ بالخصوص کشمیر میں حملوں کے لئے تربیت یافتہ دہشت گردوں کو گھسا رہا ہے ۔ معتمد خارجہ ایس جئے شنکر نے باسط کو اپنے ساؤتھ بلاک آفس طلب کرتے ہوئے اس مسئلہ پر سخت احتجاج کیا تھا ۔ انھوں نے خصوصیت سے لشکر طیبہ دہشت گرد اور پاکستانی شہری بہادر علی کا حوالہ دیا جسے شمالی کشمیر میں حالیہ انکاؤنٹر کے دوران پکڑا گیا ۔ لاہور کے موضع ضیاء بگھا کی پیدائش والا بہادر علی جموں و کشمیر میں 25 جولائی کو ہتھیاروں کیساتھ پکڑا گیا ، اُس کے پاس AK47 رائفل ، کارآمد کارتوس اور دیگر کئی اسلحہ کیساتھ عصری مواصلاتی آلات بھی پائے گئے۔

TOPPOPULARRECENT