Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / سرواسکھشا ابھیان میں بدعنوانیوں کا انکشاف

سرواسکھشا ابھیان میں بدعنوانیوں کا انکشاف

16 فرضی مدارس میں خدمات ‘ ودیا والینٹرس کے نام پر رقومات جاری

حیدرآباد۔16اکٹوبر(سیاست نیوز) محکمہ ٔ تعلیم کی جانب سے سروا سکھشا ابھیان بے قاعدگیوں کے معاملہ میں ایک اور ملازم کو معطل کرنے کے احکامات کی اجرائی عمل میںلائی گئی۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے بموجب 16فرضی مدارس میں خدمات انجام دینے والے ودیا والینٹرس کے ناموں سے جاری کردہ رقومات اور خرد برد کے واقعات میں ملوث عہدیداروں کے خلاف جاری کاروائی کے دوران ڈپٹی ایجوکیشنل آفیسر کے دفتر میں خدمات انجام دے رہے سینیئر اسسٹنٹ کو معطل کرنے کے احکام جاری کئے جا چکے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ 7اکٹوبر کو محکمہ کی جانب سے جاری کردہ ان احکامات کو بعض اعلی عہدیداروں کی پشت پناہی کے سبب حوالے نہیں کیا گیا تھا جبکہ 4ڈپٹی انسپکٹر آف اسکولس کو معطل کیا جا چکا ہے۔ دونوں شہروں میں جاری فرضی مدارس کے معاملہ کی تحقیقات میں مزید پیشرفت کے متعلق عہدیداروں نے بتایا کہ ان 16فرضی مدارس کے علاوہ دیگر مدارس کے متعلق رپورٹ پیش کی جا چکی ہے اور بہت جلد اس رپورٹ کے متعلق احکامات کی اجرائی عمل میں آئے گی اور کاروائی کا آغاز کیا جائے گا۔ سروا سکھشا ابھیان کی جانب سے جن مدارس کو عصری تعلیم کی فراہمی کیلئے ودیا والینٹرس کی تنخواہیں جاری کی جا رہی ہیں ان میں چند مدارس کے فرضی ہونے کے علاوہ بڑے پیمانے پر بے قاعدگیاں پائی جا رہی ہیں جن کے خاتمہ کیلئے محکمہ ٔ تعلیم کی جانب سے سخت گیر اقدامات کئے جار ہے ہیں ۔محکمہ ٔ تعلیم کے ایک اور ملازم کی معطلی کے بعد اب فرضی مدارس سے جاری کردہ رقومات کی بازیابی پر توجہ دی جائے گی۔عہدیداروں نے بتایا کہ 4ڈپٹی انسپکٹرس آف اسکولس کی معطلی کے بعد سیاسی دباؤ کے تحت کاروائی میں سست روی کی شکایات موصول ہو رہی تھیں لیکن رپورٹ کے مشاہدہ کے بعد سیاسی قائدین کی بھی ان کاروائیوں کو تائید حاصل ہونے لگی ہے۔

TOPPOPULARRECENT