Tuesday , October 24 2017
Home / شہر کی خبریں / سروجنی آئی ہاسپٹل میں 7افراد سرجری کے بعد بینائی سے محروم

سروجنی آئی ہاسپٹل میں 7افراد سرجری کے بعد بینائی سے محروم

حیدرآباد۔/6جولائی، ( سیاست نیوز) ایک سرکاری آئی ہاسپٹل میں سرجری کے بعد 7 افراد بینائی سے محروم ہوگئے۔ بتایا جاتا ہے کہ  بینائی حاصل کرنے کی غرض سے علاج کیلئے سرکاری دواخانہ سے رجوع ہونا ان غریب افراد کیلئے مہنگا پڑا ۔ بتایا جاتا ہے کہ سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل میں گذشتہ ہفتہ 13مریضوں کا موتیا بند کا آپریشن کیا گیا ، آپریشن کے بعد پیچیدگیاں پیدا ہوگئیں لیکن ڈاکٹروں نے اعتماد کا اظہار کیا کہ ان میں سے پانچ تا چھ افراد کو بینائی حاصل ہوگی لیکن وقت گذرنے کے بعد مریضوں میں بے چینی پیدا ہوگئی اور انہیں کچھ بھی دکھائی نہیں دینے لگا۔ دواخانہ کے عہدیداروں نے مریضوں کو دی گئی دواؤںکی بوتلوں کو فوری ضبط کرلیا اور مزید سرجری انجام دینے سے روک دیا۔ دواخانہ کے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ راجندر گپتا نے کہا کہ تحقیقات سے پتہ چلتا ہے کہ 30جون کو استعمال کردہ دوا ناقص تھی اس کا ٹسٹ کروایا گیا تو پازیٹو نکلا۔ انہوں نے کہا کہ پانچ تا چھ مریضوں نے بینائی حاصل کی ہے لیکن دیگر مریضوں کی بینائی کو بحال کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔دواخانہ کو یہ دوا سرکاری ڈرگس اسٹور سے سربراہ کی جاتی ہے۔ ڈرگ انسپکٹر نے مزید معائنوں کیلئے ان بوتلوں کو مہر بند کردیا ہے۔ مہدی پٹنم میں واقع سروجنی دیوی ہاسپٹل آنکھوں کے علاج کا سب سے بڑا دواخانہ ہے جہاں 40تا 50 مریضوں کا روزانہ آپریشن ہوتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT