Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل میں علاج کے لیے آدھار لازمی

سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل میں علاج کے لیے آدھار لازمی

دواخانہ کے عملہ سے مریضوں کو ہدایت ، مریض پریشان حال
حیدرآباد ۔ 8 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : سروجنی دیوی گورنمنٹ آئی ہاسپٹل میں مریضوں کے علاج کے لیے آدھار کارڈ کو لازم کردیا ہے ۔ دواخانہ کا عملہ علاج کے لیے رجوع ہونے والے مریضوں کو واضح ہدایات دے رہا ہے کہ پہلی مرتبہ علاج کے لیے رجوع ہونے والے مریض اپنا رجسٹریشن آدھار کارڈ کے ذریعہ کرانا ضروری ہے ۔ جس کی وجہ سے مختلف مقامات و ریاستوں سے آنکھوں کے علاج کے ضمن میں رجوع ہونے والے مریضوں کو بے حد مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ انتظامیہ کی جانب سے آدھار لازمی کرنے کی وجہ سے دواخانہ میں حالات دگرگوں ہیں ۔ جنوبی ریاستوں میں سرکاری آنکھوں کا واحد دواخانہ سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل ہی ہے ۔ جس کی وجہ سے مختلف اضلاع و ریاستوں سے کافی مریض آنکھوں کے علاج کے لیے رجوع ہوتے ہیں اور روزانہ آوٹ پیشنٹس کی تعداد 600 سے زائد ہے ۔ آدھار کارڈ لازمی کرنے کی اطلاع نہ ہونے کی وجہ سے دور دراز علاقوں سے آئے مریضوں کو کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ آدھار لازمی کرنے سے متعلق ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر رویندر گوڑ سے دریافت کرنے پر بتایا کہ حکومت نے ایک ماہ قبل ہی آدھار کو لازمی قرار دیا ہے ۔ فی الحال آدھار کے بغیر رجوع ہونے والے مریضوں کی آنکھوں کا معائنہ کرتے ہوئے دوائیں فراہم کی جائیں گی مگر آئندہ رجوع ہونے والے مریضوں کے لیے آدھار کارڈ ساتھ لانا ضروری ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT