Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / سرکاری اداروں کی تقسیم کا کام ہنوز تعطل کا شکار

سرکاری اداروں کی تقسیم کا کام ہنوز تعطل کا شکار

چیف منسٹر اے پی کا مرکز سے اظہار ناراضگی ، بذریعہ ٹیلی کانفرنس خطاب
وجئے واڑہ ۔ 3 ۔ جون : ( پی ٹی آئی ) : چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے مرکزی حکومت پر اس بات کے لیے اظہار ناراضگی جتائی ہے کہ ریاست آندھرا پردیش کی تقسیم کے دو سال بعد بھی اے پی تنظیم جدید ایکٹ 2014 کے شیڈول 9 اور 10 کے تحت سرکاری ادارہ جات کی تقسیم کا عمل تکمیل نہیں پایا ہے جس کے سبب دونوں پڑوسی ریاستوں کے درمیان مسائل پیدا ہورہے ہیں ۔ مرکزی حکومت کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ اس مسئلہ سے تیز رفتاری کے ساتھ نمٹیں ۔ چیف منسٹر کے دفتر سے جاری کردہ بیان میں یہ بات بتائی گئی ۔ چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو اپنی رہائش گاہ سے بذریعہ ٹیلی کانفرنس عہدیداروں ، عوامی نمائندوں بشمول ارکان اسمبلی کے ساتھ ریاست کی تقسیم کے متعلق موضوعات پر تبادلہ خیال کے دوران ان خیالات کا اظہار کیا ۔ چندرا بابو نائیڈو نے ریاست کی تقسیم سے علاقہ آندھرا کو پیش آنے والے آمدنی خسارہ کی بھرپائی کے لیے مرکز سے صرف 2 ہزار تین سو کروڑ کی اجرائی پر تنقید کی ۔ انہوں نے کہا کہ تقسیم کے بعد ریاست اے پی کو پہلے سال سولہ ہزار کروڑ روپئے آمدنی خسارہ پیش آیا جب کہ صرف 2300 کروڑ جاری کئے گئے ۔ چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو نے یاد دلایا کہ 14 ویں فینانس کمیشن نے اس بات کو صاف طور پر واضح کیا ہے ملک کی شمال مشرق ریاستوں کے مقابل ہم کو سال 2019-20 میں بھی زبردست مالی خسارہ کا سامنا رہے گا ۔ چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ ریاست آندھرا پردیش نے پچھلے دو سالوں میں اس کی آمدنی کو بہ مشکل 47 فیصد سے 53.33 فیصد کرسکی تاہم ریاست نے اس کی معاشی ترقی شرح کو 10.99 فیصد تک پہنچایا ہے جو کہ ایک ریکارڈ اور جو قومی اوسط شرح سے تین گنا زیادہ ہے ۔ انہوں نے کہا ریاست آندھراپردیش جہاں تک فی کس آمدنی کا تعلق ہے وہ تمام دیگر جنوبی ریاستوں سے پیچھے ہے ۔ انہوں نے مرکزی حکومت سے کہا کہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ وہ ملک کی دیگر ریاستوں کے شانہ بہ شانہ ترقی کرنے کے لیے ریاست اے پی کو تمام تر مدد دے ۔ چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ ریاست آندھرا پردیش ایک تاریخی موڑ پر ہے اور اگر ہم اس وقت سست رفتار ہوجائیں گے تب ہم پیچھے رہ جائیں گے ۔ ہم کو پورے جذبہ و عزم سے آگے بڑھنا ہوگا ۔ جب تک کہ ہم اپنے مقاصد میں کامیاب و کامران نہیں ہوجاتے ۔۔

TOPPOPULARRECENT