Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / سرکاری اسکولس میں تمام طلبہ کو پاس کرنے کی پالیسی برقرار

سرکاری اسکولس میں تمام طلبہ کو پاس کرنے کی پالیسی برقرار

طالبات کے معیار تعلیم کو بہتر بنانے پر ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ کا زور ، دہلی میں مرکزی تعلیمی مشاورتی بورڈ کا اجلاس
حیدرآباد ۔ 26 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ کے سرکاری اسکولس میں طلبہ کو فیل ہونے کے باوجود موجودہ کلاس میں برقرار نہ رکھنے کی سرکاری پالیسی پر عمل جاری رہے گا اور فیل ہونے کے باوجود طلبہ کو آگے کی کلاس کے لیے پرموٹ کیا جائے گا ۔ ملک کی بیشتر ریاستوں نے بعض مضامین میں ناکام ہونے کے باوجود طلبہ کو آگے کی کلاس میں پرموٹ کرنے کی حامی بھری ہے ۔ ان میں تلنگانہ شامل ہے ۔ مرکز نے اس تعلق سے فیصلہ ریاستوں کی مرضی پر چھوڑ دیا تھا ۔ کل دہلی میں تعلیم سے متعلق مرکزی مشاورتی بورڈ کا اجلاس منعقد ہوا جس میں تمام ریاستوں کے وزرائے تعلیم اور سکریٹریز نے شرکت کی ۔ تلنگانہ کی نمائندگی ڈپٹی چیف منسٹر کے سری ہری نے کی جو تعلیم کے وزیر بھی ہیں ۔ تلنگانہ کے اسپیشل چیف سکریٹری رنجیو آر اچاریہ نے بھی شرکت کی ۔ مرکزی وزیر فروغ انسانی وسائل پرکاش جاویڈکر نے میٹنگ کی صدارت کی ۔ اجلاس میں ملک میں طالبات کی تعلیم کے معیار کے بہتر بنانے کے لیے تلنگانہ کی پیش کردہ تجویز کا جائزہ لینے سے اتفاق کیا گیا اور کے سری ہری کو اسٹڈی پیانل کا صدر نشین مقرر کیا گیا ہے ۔ تلنگانہ نے ایجنڈے میں لڑکیوں کی تعلیم کو شامل نہ کرنے کے مسئلہ کی نشاندہی کی ۔ میٹنگ کے بعد کے سری ہری نے کہا کہ ہم نے فیل طلبہ کو موجودہ کلاس میں برقرار رکھنے کی مخالفت کی اور واضح کیا کہ ایسے کسی سسٹم سے معیار تعلیم کو بہتر بنانے میں مدد نہیں ملے گی ۔ سری ہری نے کہا کہ ان کی حکومت ٹیچرس کی تعلیم دینے کی صلاحیت کو بہتر بنانے اور ٹیچرس ٹریننگ اداروں کے معیار کو فروغ دینے اور ٹریننگ کے طریقوں کو مضبوط کرنے کے حق میں ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT