Sunday , August 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سرکاری تربیت گاہ اساتذہ نریڈمیٹ سکندرآباد کی زبوحالی

سرکاری تربیت گاہ اساتذہ نریڈمیٹ سکندرآباد کی زبوحالی

کوڑنگل۔16اکٹوبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سرکاری تربیت گاہ اساتذہ نریڈمیٹ سکندرآباد عرصہ دراز سے اساتذہ کی تربیت کا باوقار مرکز رہا ہے جس میں حیدرآباد و سکندرآباد کے علاوہ بیشتر اضلاع سے وابستہ طلباء وطالبات اساتذہ کی تربیت حاصل کرنے کیلئے جوق درجوق آتے ہیں ۔ یہاں سے تاحال ہزاروں طلباء و طالبات فارغ التحصیل ہوکر پیشہ درس و تدریس سے منسلک ہوکر ملک و قوم کی خدمت کررہے ہیں ۔ موجودہ طور پر حالات ناگفتہ بہ ہوکر رہ گئے ہیں ۔ تفصیلات کی بموجب کوڑنگل سے تعلق رکھنے والے اولیائے طلبا کا وفد نمائندہ ’’سیاست‘‘ سے ربط پیدا کرتیہ وئے استدلال پیش کیا کہ ان دنوں مذکورہ ٹریننگ سنٹر میں ارو سیکشن کیلئے ایک بھی لکچرر موجود نہیں ہے ۔ تلگو لکچررز کو تعینات کیا گیا ہے جس سے تعلیم بری طرح متاثر ہورہی ہے ۔ ٹیچر ٹریننگ حاصل کرنے والے امیدواروں کی تعداد پچاس ہے ۔ سرکاری اردو میڈیم مدارس و کالجس میں بہتر و معیاری تعلیم فراہم کرنے کیلئے ایک طرف ڈنکے بجائے جارہے ہیں ‘ حکومت اقلیتوں کو تعلیمی ترقی کے سبز باغ دکاکر خوش کرتی ہے مگر عمل نہیں ہوتا ۔ موجودہ طور پر ٹرینیز کا مستقبل تاریک نظر آتا ہے ۔ اپنے طور پر کتب فراہم کرتے ہوئے وقت گزاری کررہے ہیں ۔ اولیائے طلبہ نے مزید بتایا کہ اس خصوص میں سابق میںوزیر تعلیم و ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمود علی سے بھی نمائندگی کرتے ہوئے یادداشت پیش کی گئی مگر سعی ناکام ثایبت ہوئی ۔ اولیائے طلبہ ارباب مجاز سے پُرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ عاجلانہ طور پر اردو ‘ لکچررز کا تقرر عمل میں لائے یا کہنے مشق اردو ‘ اساتذہ کی تعیناتی عمل میں لائیں تاکہ موجودہ تعلیمی سال رائیگاں نہ ہونے پائے ۔اردو میڈیم سے ٹیچر ٹریننگ حاصل کرنے والے امیدواروں کیلئے تلگودیشم لکچررز کی تعیناتی فہم و قیاس سے بالاتر ہے ۔ وفد کے ارکان میں محمد شمس الدین اور محمد الطاف رسول قابل ذکر ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT