Sunday , October 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سرکاری دفاتر کی اچانک تنقیح، حاضری کا جائزہ

سرکاری دفاتر کی اچانک تنقیح، حاضری کا جائزہ

غیر حاضر ملازمین کے بارے میں انچارج کلکٹر کا استفسار
نظام آباد:12؍ فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) انچارج ضلع کلکٹر رویندرریڈی نے آج مختلف سرکاری دفاتر کی اچانک تنقیح کرتے ہوئے ملازمین کی حاضری کا جائزہ لیا۔ سروے اینڈ لینڈ ریکارڈ سیول سپلائیز کارپوریشن کے ضلع منیجر کے دفتر، سیول سپلائیز کے دفتر کی اچانک تنقیح کی۔ انچارج ضلع کلکٹر رویندرریڈی نے سروے اینڈ لینڈ ریکارڈآفس پہنچ کر بائیومیٹرک حاضری کے نظام کے بارے میں دریافت کرنے پر سپرنٹنڈنٹ نے انچارج ضلع کلکٹر کو واقف کراتے ہوئے بتایا کہ تمام منڈلوں کو عہدیداروں کے بائیومیٹرک نظام کا نافذ نہیں کیا گیا جس پر انہوں نے دفتر کے وقت کے باوجود بھی غیر حاضر افراد کے بارے میں تفصیلات حاصل کی اور ریکارڈس کا معائنہ کیا۔ فائلس باقاعدہ طور پر نہ رکھنے پر ریکارڈ رکھنے کی اور ناکارہ ہونے سے قبل ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت دی۔ ریکارڈس کودیمک کھانے سے قبل اسپرے کرنے ، 327 سروے کے کام زیر التواء ہونے پر برہمی کا اظہار کیا۔ سروے اینڈ لینڈ ریکارڈ میں 53 افراد کام کررہے ہیں اتنا عملہ ہونے کے باوجود بھی حیدرآباد، ریکاریڈی سے بھی زیادہ سروے کے کام زیر التواء ہونے پر ناراضگی ظاہر کی جن مقامات پر عملہ نہیں ہے ان مقامات پر بھو بھارتی کے عہدیداروں کی خدمت حاصل کرنے، فوری زیر التواء کاموں کی تکمیل کرنے ، کاموں کیلئے کسان دور دراز سے آتے ہیں۔ معاشی اور جسمانی مسائل کے حل کیلئے امید کے ساتھ آتے ہیں لیکن اس دفتر کے بارے میں زیادہ شکایتیں وصول ہورہی ہے وقت پر کام کرنے اور قواعد کے مطابق کام کرنے کی منڈل سطح پر زیر التواء تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کام کرنے کی ہدایت دی۔ ضلع انچارج کلکٹر نے سیول سپلائیز کارپوریشن کے آفس پہنچ کر بائیومیٹرک نظام کے بارے میں تفصیلات حاصل کی۔ جن ملازمین کو زائد کام نہیں ہے دیگر مقامات پر تبادلہ کرنے کی ہدایت دی۔ سیول سپلائیز آفس میں بائیومیٹرک نظام کو نافذ نہ کرنے پر برہمی کا اظہار کیا۔ زائد ملازمین و دیگر محکمہ میں تبادلہ کرنے کی ہدایت دی۔ اس موقع پر ڈی ایم سیول سپلائیز جے جے سنگھ ، ڈی ایف او کرشنا پرسادبھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT