Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / سرکاری ملازمتوں میں اقلیتوں کے تقررات

سرکاری ملازمتوں میں اقلیتوں کے تقررات

مرکزی وزارتوں کوتفصیلات پیش کرنے کی ہدایت، نمائندگی کم ہونے کی وجوہات طلب
نئی دہلی ۔ /12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی حکومت نے تمام مرکزی وزارتوں کو سال 2015-16 ء کے دوران اقلیتوں کے تقررات پر اعداد و شمار پیش کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ تقررات میں اگر اقلیتوں کا فیصد کم ہو تو اس کی وجوہات بتانے پر بھی زور دیا گیا ہے ۔ اقلیتوں کی بہبود کیلئے وزیراعظم کے 15 نکاتی پروگرام کے جائزہ کے حصے کے طور پر یہ تفصیلات طلب کی گئی ہیں ۔ تمام وزارتوں سے کہا گیا ہے کہ وہ یکم اپریل 2015 ء تا /31 مارچ 2016 ء کی تفصیلی رپورٹ جاریہ ماہ کے ختم تک پیش کردیں ۔ ڈپارٹمنٹ آف پرسونل اینڈ ٹریننگ نے اس ضمن میں تمام مرکزی وزارتوں کے سکریٹریز کو ہدایت جاری کی ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ سکریٹریز کی کمیٹی اور کابینہ وقفہ وقفہ سے اس ضمن میں پیشرفت کا جائزہ لیا کرتی ہیں ۔ بتایا گیا ہے کہ یہ رپورٹ جہاں سالانہ اعداد و شمار کی تفصیلات بتانے میں معاون ہے وہیں اس سے اقلیتی فرقہ کے تقررات کے معاملے میں اگر گزشتہ سال کے مقابلے اس سال فیصد کم رہا ہو تو اس کی وجوہات کا جائزہ لینے میں بھی مدد ملے گی ۔ یہ اعداد و شمار 5 اقلیتی طبقات مسلمانوں ، عیسائیوں ، سکھ ، بدھسٹ اور پارسی کے علاوہ جین طبقہ کے بارے میں جسے 2014 ء میں اقلیتی طبقہ قرار دیا گیا ہے ، طلب کی گئی ہیں ۔ کسی بھی وزارت یا محکمہ میں نوڈل آفیسر کو وزیراعظم کے 15 نکاتی پروگرام پر عمل آوری سے متعلق تعاون کیلئے نامزد کیا گیا ہے ۔ وہ تمام امور کی جانچ کرتے ہوئے یہ رپورٹ روانہ کریں گے ۔ ان تمام سے ملازمین کی مجموعی تعداد ، ایک سال کے دوران جو تقررات کئے گئے اس کی تفصیل اور اقلیتی افراد کو فراہم کردہ ملازمت کی تفصیل کے علاوہ گروپ اے ، بی ، سی ، اور ڈی زمروں کے ملازمین کی تفصیلات علحدہ علحدہ طور پر پیش کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT