Monday , May 1 2017
Home / شہر کی خبریں / سرکاری پروگرامس ٹی آر ایس کے ذاتی پروگراموں میں تبدیل : وی ہنمنت راؤ

سرکاری پروگرامس ٹی آر ایس کے ذاتی پروگراموں میں تبدیل : وی ہنمنت راؤ

تشکیل تلنگانہ سونیا گاندھی کی مرہون منت، ٹی آر ایس کا رویہ بدبختانہ ، کانگریس قائد کا ردعمل
حیدرآباد 9 اپریل (سیاست نیوز) سینئر کانگریس قائد و سابق رکن پارلیمان وی ہنمنت راؤ نے تلنگانہ راشٹرا سمیتی قائدین پر اپنی شدید برہمی کا اظہار کیا اور کہاکہ سرکاری پروگراموں کو ٹی آر ایس کے قائدین اپنے ذاتی پروگرامس تصور کررہے ہیں جوکہ تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے لئے انتہائی بدبختی کی بات ہے۔ وی ہنمنت راؤ نے ٹی آر ایس کو ہدف ملامت بنایا اور کہاکہ صرف کے چندرشیکھر راؤ کی ایک شخصیت سے علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل عمل میں نہیں لائی گئی بلکہ کانگریس قائدین کی بھی حصول علیحدہ ریاست تلنگانہ جدوجہد میں عظیم قربانیاں ہیں۔ بالخصوص علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل محض بے باک و نڈر صدر کل ہند کانگریس کمیٹی شریمتی سونیا گاندھی کے فیصلہ کے بعد ہی ممکن ہوسکی جبکہ صدر ٹی آر ایس کے چندرشیکھر راؤ نے کانگریس کے ساتھ دھوکہ کیا۔ تلنگانہ کی تشکیل سے قبل اگر علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل عمل میں آئے گی تو فوری بعد ٹی آر ایس کانگریس میں ضم کرنے کا خود چندرشیکھر راؤ نے اعلان کیا تھا۔ لیکن وہ خود اپنے اعلان اور وعدے سے منحرف ہوگئے۔ سینئر کانگریس قائد ہنمنت راؤ نے دریافت کیاکہ آیا ایک قومی پارٹی صدر کے ساتھ کئے ہوئے وعدے سے چندرشیکھر راؤ انحراف کرسکتے ہیں تو عوام سے کئے جانے والے وعدوں پر کہاں تک عمل کرسکیں گے اس کا بہتر طور پر عوام کو ہی اندازہ لگانا چاہئے۔ انھوں نے کہاکہ ریاست تلنگانہ کی قدیم و نامور عثمانیہ یونیورسٹی کی صد سالہ تقاریب منظم کی جارہی ہیں لیکن حکومت اور یونیورسٹی کے بعض عہدیدار اپنی من مانی کررہے ہیں لہذا عثمانیہ یونیورسٹی کی صد سالہ تقاریب میں تمام سیاسی جماعتوں کو حصہ دار بنانے اور تمام قائدین کو مدعو کرنے کے ساتھ ساتھ 1969 ء میں تلنگانہ تحریک کے جہد کاروں کو خراج تحسین پیش کرنے اور انھیں تہنیت پیش کرنے کا پرزور مطالبہ کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT