Saturday , July 22 2017
Home / Top Stories / سرینگر میں رائے دہی کے دوران پرتشدد مظاہرے، 8 ہلاک

سرینگر میں رائے دہی کے دوران پرتشدد مظاہرے، 8 ہلاک

کئی پولنگ بوتھس بند،سکیورٹی فورسیس کی فائرنگ ، پیلٹ گنس کا استعمال، صرف 6.5  فیصدرائے دہی

سرینگر۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سرینگر لوک سبھا حلقہ کیلئے ضمنی انتخابات کے سلسلے میں آج رائے دہی کے دوران تشدد کے واقعات پیش آئے جس میں 8  افراد ہلاک اور کئی زخمی ہوگئے۔ لوک سبھا کے مختلف حصوں میں تشدد پر آمادہ ہجوم پر سکیورٹی فورسیس کی فائرنگ میں یہ ہلاکتیں ہوئیں جبکہ 3 بجے دن تک صرف 6.5 فیصدرائے دہی ریکارڈ کی گئی۔ ضلع بڈگام کے فقیرپورہ ، چرار شریف اور بیرواہ علاقہ میں 2 افراد ہلاک ہوئے۔ اسی ضلع کے چدورہ علاقہ میں ایک شخص ہلاک ہوا جبکہ مگم ٹاؤن میں جو گلمرگ کا باب الداخلہ سمجھا جاتا ہے، ایک شخص ہلاک ہوا۔ ضلع بڈگام میں کئی مقامات پر پُرتشدد احتجاج  کے باعث پولنگ اسٹاف میں تقریباً 70% پولنگ بوتھس بند کردیئے تھے۔ عہدیداروں نے بتایا کہ سنگباری اور پٹرول بم پھینکنے والے ہجوم سے نمٹنے کیلئے فوج کی مدد طلب کی گئی۔ سرینگر حلقہ کے گندربل ضلع میں ایک پولنگ بوتھ کو نذرآتش کردیا گیا۔ ہزاروں احتجاجی چرارِ شریف کے فقیر پورہ میں واقع ایک پولنگ اسٹیشن میں گھس پڑے اور عمارت میں توڑ پھوڑ مچائی۔ سکیورٹی فورسیس نے انہیں منتشر کرنے کیلئے کئی راؤنڈ ہوائی فائرنگ کی لیکن وہ احتجاج جاری رکھے ہوئے تھے۔ فائرنگ میں 6 افراد زخمی ہوگئے جن میں 2 افراد 20 سالہ محمد عباس اور 15 سالہ فیضان احمد راتھر گولی لگنے سے زخمی ہونے کے بعد جانبر نہ ہوسکے۔ ایک اور واقعہ میں سکیورٹی فورسیس نے بیرواہ علاقہ میں سنگباری کررہے ہجوم پر فائرنگ کی جس میں ایک شخص نثار احمد ہلاک ہوگیا۔ ضلع بڈگام کے چدورہ اسمبلی حلقہ میں واقع دولت پورہ میں بھی ایک شخص سکیورٹی فورسیس کی فائرنگ میں ہلاک ہوا جس کی شبیر احمد کی حیثیت سے شناخت کی گئی۔ ایک اور نوجوان عادل فاروق مگم ٹاؤن میں پیلٹ گن کی وجہ سے زخموں سے جانبر نہ ہوسکا۔ بیرواہ علاقہ میں پولیس کی احتجاجیوں کے ہجوم پر فائرنگ کے نتیجہ میں ایک شخص عاقب وانی ہلاک ہوگیا۔ عہدیداروں نے بتایا کہ پولنگ اسٹیشن کی سکیورٹی کیلئے تعینات بی ایس ایف فائرنگ کی لیکن انہیں پیلٹ گنس فراہم نہیں کئے گئے تھے۔ سکیورٹی فورسیس عملہ کو چدورہ علاقہ میں ہجوم کی شدید سنگباری کے باعث دو پولنگ اسٹیشن بند کرنے کیلئے مجبور ہونا پڑا۔ سرینگر پارلیمانی حلقہ کے دیگر کئی علاقوں میں بھی سنگباری کے واقعات پیش آئے۔ سرینگر، بڈگام اور گندربل میں تقریباً 2 درجن مقامات پر تشدد کے واقعات پیش آئے۔ رائے دہی کا فیصد آج انتہائی کم رہا اور 3 بجے دن 12.61 لاکھ رائے دہندوں کے منجملہ 5.84 نے ہی حق رائے دہی سے استفادہ کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT