Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / سرینگر میں طلباء اور سکیورٹی فورسیس کے مابین جھڑپیں

سرینگر میں طلباء اور سکیورٹی فورسیس کے مابین جھڑپیں

مصروف ترین تجارتی مرکز پر ٹریفک جام
سرینگر۔ 9 مئی (سیاست ڈاٹ کام) وادی کشمیر میں لال چوک کے قریب مصروف ترین مولانا آزاد روڈ پر احتجاجی طلباء اور سکیورٹی فورسیس کے مابین جھڑپ ہوگئی۔ پولیس کے عہدیدار نے کہا کہ ایس پی ہائیر سیکنڈری اسکول اور ویمنس کالج کے طلباء کی سکیورٹی فورسیس کے ساتھ جھڑپ ہوئی جس کے بعد سکیورٹی فورسیس نے انہیں منتشر کرنے کیلئے آنسو گیاس کے کئی شیلس چھوڑے۔ انہوں نے ابھی تک کسی کے زخمی ہونے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ جھڑپ کی وجہ سے قلب شہر میں واقع تجارتی مرکز پر ٹریفک اور کاروباری سرگرمیاں متاثر رہیں۔ عہدیدار نے بتایا کہ آخری اطلاعات موصول ہونے تک بھی جھڑپ جاری تھی۔ انہوں نے کہا کہ طلباء 15 اپریل کو پلوامہ میں گورنمنٹ ڈگری کالج طلبہ کے خلاف سکیورٹی فورسیس کی زیادتی اور اس کے بعد وادی کشمیر میں پیش آئے احتجاج کے خلاف یہ مظاہرہ کررہے تھے۔ ان احتجاجی مظاہروں میں گرفتار کئے گئے طلباء کی رہائی کا بھی وہ مطالبہ کررہے تھے۔ کالج پر 17 اپریل کو کئے گئے دھاوے کے بعد سارے کشمیر میں احتجاج بھڑک اٹھا۔ حکام نے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں گزشتہ ماہ تقریباً ایک ہفتہ تک تدریسی سلسلہ بند کردیا تھا۔ سرینگر کے علاوہ وادی کے مختلف حصوں میں جھڑپوں کے دوران کئی طلباء کو گرفتار کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT