Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / سرینگر میں عسکریت پسندوں کا حملہ ‘ سی آر پی ایف کمانڈنٹ ہلاک

سرینگر میں عسکریت پسندوں کا حملہ ‘ سی آر پی ایف کمانڈنٹ ہلاک

دو عسکریت پسند بھی مارے گئے ۔ سارے علاقہ کی ناکہ بندی ۔ حملوں آوروں کی تلاش جاری
سرینگر 15 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) سرینگر کے نوہٹا علاقہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملہ میںسی آر پی ایف کا ایک کمانڈنٹ اور دو عسکریت پسند ہلاک ہوگئے ہیں۔ عسکریت پسندوں نے یہاں سی آر پی ایف پر فائرنگ کردی تھی ۔ سرینگر میں یوم آزادی سے قبل دہشت گرد حملوں کا خطرہ ظاہر کیا گیا تھا اور یہاں کرفیو کے باوجود فائرنگ کا تبادلہ عمل میں آیا ۔ کہا گیا ہے کہ اس حملہ میں سی آر پی ایف کے پانچ جوان اور ایک پولیس اہلکار کے زخمی ہوجانے کی بھی اطلاع ہے ۔ سکیوریٹی فورسیس پر یہاں تین عسکریت پسندوں نے حملہ کیا تھا ۔ یہ حملہ ملک کے 70 ویں یوم آزادی کے موقع پر کیا گیا تھا ۔ پولیس کے اضافی دستوں کو وہاں روانہ کردیا گیا ہے جبکہ فائرنگ کا تبادلہ جاری تھا ۔ ایک پولیس عہدیدار نے بتایا کہ عسکریت پسندوں نے یہاں ایک سی آر پی ایف پوسٹ پر حملہ کیا تھا ۔ عسکریت پسندوں کے حملہ میں سی آر پی ایف کی 49 ویں بٹالین کے کمانڈنٹ پرمود کمار ہلاک ہوگئے جبکہ عسکریت پسندوں نے پرانا شہر کے علاقہ میں سکیوریٹی پٹرولنگ پارٹی پر دستی بم پھینکے اور فائرنگ کردی ۔ کہا گیا ہے کہ نیم فوجی دستوں کے نو ارکان زخمی ہوئے ہیں اور انہیں علاج کیلئے دواخانہ منتقل کیا گیا ہے ۔ پولیس نے کہا کہ حملہ آور نوہٹا کے ایک گھر میں داخل ہوئے جو جامع مسجد کے قریب ہے ۔ دو عسکریت پسندوں کو گولی ماردی گئی ہے جبکہ دو ابھی بھی گھر کے اندر سے فائرنگ کر رہے ہیں۔ میڈیا کی اطلاعات میں کہا گیا ہے کہ سکیوریٹی فورسیس نے علاقہ کی ناکہ بندی کردی ہے ۔ یہ واقعہ آج صبح 8.45 بجے پیش آیا ۔ مقامی پولیس نے فوج کی مدد سے یہاں ناکہ بندی کرکے تلاشی مہم شروع کی تھی کیونکہ انہیں اطلاع ملی تھی کہ علاقہ میں عسکریت پسند روپش ہیں۔ اطلاعات کے بموجب دہشت گردوں نے ناکہ بندی مکمل ہوتے ہی جوانوں پر حملہ کردیا تھا ۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ علاقہ میں عسکریت پسندوں کی نقل و حرکت کی اطلاع ملی تھی جس کے بعد ہم نے علاقہ کی ناکہ بندی کرکے تلاشی مہم شروع کی تھی کہ یہ حملہ کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT