Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / سرینگر ۔ جموں شاہراہ 30 گھنٹے بعد ٹریفک کیلئے بحال

سرینگر ۔ جموں شاہراہ 30 گھنٹے بعد ٹریفک کیلئے بحال

ٹریفک جام میں پھنسے گاڑیوں کو فی الحال جموں سے وادی جانے کی اجازت
سرینگر، 22 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) مٹی کے تودے گرنے کے باعث 30 گھنٹوں تک بند رہنے والی 300 کلو میٹر طویل سرینگر۔ جموں قومی شاہراہ پر چہارشنبہ کو گاڑیوں کی ٹریفک بحال ہوئی۔ اس شاہراہ پر 20 فبروری کو شدید بارشوں کے باعث مٹی کے تودے گرآنے کے بعد گاڑیوں کی آمدورفت بند کی گئی تھی۔ ایک ٹریفک پولیس عہدیدار نے نیوز ایجنسی ’یو این آئی‘ کو بتایا کہ بانہال کے مقام پر تازہ برفباری ہونے کے باوجود شاہراہ پر گاڑیوں کی ٹریفک بحال کی گئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ آج صبح ٹھیک چھ بجے سے سینکڑوں کی تعداد میں مسافر و مال بردار گاڑیاں جموں کے مختلف علاقوں سے وادی کشمیر کی طرف روانہ ہوئیں۔ انھوں نے بتایا کہ چہارشنبہ کو کسی بھی گاڑی کو کشمیر سے جموں کی طرف جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔ اس شاہراہ پر آج سفر کرنے والے لوگوں نے بتایا کہ انہیں بدترین ٹریفک جام کا سامنا کرنا پڑا۔ انہوں نے بتایا کہ شاہراہ مختلف مقامات پر انتہائی خستہ ہوچکی ہے ۔ دریں اثنا جواہر ٹنل کے اس پار مختلف علاقوں بشمول قاضی گنڈ اور اننت ناگ میں سینکڑوں کی تعداد میں خالی ٹرکیں اور تیل کے ٹینکرس درماندہ پڑے ہوئے ہیں۔ اس دوران بارڈر روڈس آرگنائزیشن (بی آر او) کے عہدیداروں نے بتایا کہ مسلسل کوششوں کے بعد شاہراہ پر سے تودوں کا ملبہ ہٹالیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT