Friday , August 18 2017
Home / کھیل کی خبریں / سری لنکا: فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں کے گرد گھیرا تنگ

سری لنکا: فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں کے گرد گھیرا تنگ

کولمبو۔19 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکائی فکسنگ تنازع میں ملوث افراد کے گرد گھیرا تنگ ہونے لگا، بولنگ کوچ انوشا سمارانائیکے کو بورڈ نے تاحکم ثانی کھیل کی تمام سرگرمیوں سے معطل کر دیا اور نیٹ بولر بننے والے مبینہ بکی گیان وشواجیتھ پر بھی پابندی عائد کر دی گئی۔ پولیس کے خصوصی یونٹ کی تحقیقات جاری ہیں۔ ٹیم منیجر جیریل فریڈریک اور کپتان انجیلو میتھیوز کو طلب کرلیا گیا ہے۔ اوپنر کوشل پریرا نے کچھ عرصے قبل کہا تھا کہ بکیز کی جانب سے انھیں اور رنگانا ہیراتھ کو ویسٹ انڈیز کے خلاف ایک ٹسٹ میچ میں ناقص کارکردگی کیلئے بڑی رقم کی پیشکش کی گئی ۔ جس کے بعد کرکٹ بورڈ اور پولیس کے فنانشل کرائمز ڈویژن کی جانب سے الگ الگ معاملے کی تحقیقات کا آغاز کیا گیا۔
ایس ایل سی کی جانب سے ابتدائی تحقیقات کی روشنی میں بولنگ کوچ انوشا سمارانائیکے کو معطل کر دیا گیا، ان پر الزام ہے کہ ایک مبینہ بکی گیان وشواجیتھ کے ساتھ قریبی تعلقات ہیں جو نیٹ بولر کی حیثیت میں ٹریننگ کے دوران ٹیم میں شامل ہوا کرتا تھا، وہ خود متحرک کرکٹر نہیں ہے۔ بورڈ کے نئے صدر تھلنگا سماتھی پالا نے کہا کہ میں نے اس بارے میں تفصیلی رپورٹ طلب کی اور اس کی روشنی میں بولنگ کوچ اور ایک نیٹ بولر کو معطل کیا جا رہا ہے، یہ دونوں تحقیقات مکمل ہونے تک معطل رہیں گے، قصور وار ثابت ہونے پر ان کے خلاف سخت کارروائی کی جاسکتی ہے۔ دوسری جانب پولیس کے خصوصی یونٹ نے پہلے اس معاملے پر پریرا اور ہیراتھ کے بیانات ریکارڈ کئے جس کے بعد  ٹیم منیجر جیریل فریڈریک اور انجیلو میتھیوز کو طلب کیا گیا۔ فریڈریک نے اپنا بیان ریکارڈ کرا دیا۔ تاہم میتھیوز کی درخواست پر انھیں کسی اور دن حاضر ہونے کی اجازت دے دی گئی۔

TOPPOPULARRECENT