Monday , September 25 2017
Home / دنیا / سری لنکا میں ٹامل گروپس کی ہڑتال سے عام زندگی درہم برہم

سری لنکا میں ٹامل گروپس کی ہڑتال سے عام زندگی درہم برہم

کولمبو۔13نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سری لنکا کی کلیدی ٹامل پارٹی ٹی این اے اور دیگر سیول سوسائٹی تنظیموں نے شمالی اور مشرقی صوبوں میں حکومت کی جانب سے تمام سیاسی قیدیوں کو آماد کرنے اور دہشت گردی قوانین کو کالعدم قرار نہ دینے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے ایک روزہ بند منایاجس سے اس خطہ میں عام زندگی درہم برہم ہوگئی ۔ اطلاعات کے مطابق بند سے شہری علاقے زیادہ متاثر ہوئے جن میں گنجان آبادی والا جافنا سب سے زیادہ متاثر ہوا ۔ عوامی ٹرانسپورٹ ‘ اسکولس ‘ دفاتر اور تجارتی ادارے بند رہے ۔ ٹامل گروپس نے سری لنکا کی حکومت پر الزام عائد کیا کہ حکومت نے 7نومبر تک جن سیاسی قیدیوں کو رہا کرنے کا وعدہ کیا تھا ‘ اس پر عمل آوری نہیں کی گئی ۔ لہذا گروپس نے سیاسی قیدیوں کی فوری رہائی اور دہشت گردی قانون یعنی  پریونیشن آف ٹیررازم ایکٹ (PTA) کو کالعدم کرنے کا مطالبہ کیا جن کا اطلاق سری لنکا میں خانہ جنگی کے دوران کیا گیا تھا ۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہے کہ گذشتہ ماہ جیلوں میں زائد از 100ٹامل سیاسی قیدیوں نے بھوک ہڑتال کی تھی جہاں انہوں نے عام معافی کے تحت ان کی رہائی کا مطالبہ کیا ۔ حکومت کا استدلال ہے کہ  قیدیوں کو عام معافی کے تحت رہا نہیں کیا جاسکتا ‘ البتہ انہیں ضمانت پر رہا کئے جانے پر غور و خوض کیا جاسکتا ہے ۔ 30قیدیوں کو جن کے ایل ٹی ٹی ای سے مبینہ روابط تھے ‘ کل مشروط ضمانت پر رہا کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT