Thursday , May 25 2017
Home / Top Stories / سری لنکا کچرہ سانحہ، مہلوکین کی تعداد23 سے زیادہ

سری لنکا کچرہ سانحہ، مہلوکین کی تعداد23 سے زیادہ

COLOMBO, APR 16 :- Members of the military carry a dead victim during a rescue mission after a garbage dump collapsed and buried dozens of houses in Colombo, Sri Lanka April 16, 2017. REUTERS-13R

کولمبو، 16 اپریل (سیاست ڈاٹ کام)سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو کے کولوننوا علاقے میں 300 فٹ اونچے گندگی کے ایک بڑے ڈھیر میں آگ لگنے اور دھنسنے کی صورت میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 23 ہو گئی ہے ۔ راحت اور بچاؤ کارکنان نے ہفتہ دیر رات لاپتہ افراد کی تلاش میں چلائی گئی مہم کو ملتوی کر دیا ہے ۔مہم کی قیادت کر رہے فوج کے ایک افسر سُدنتھا رانے سنگھے نے رائٹر کو بتایا کہ، “ہمارا بنیادی مسئلہ یہ ہے کہ ہمیں یہ واضح طور پر پتہ نہیں ہے کہ کوڑے کے ڈھیر میں کتنے لوگ دبے ہوئے ہیں کیونکہ کوئی بھی اپنے رشتہ داروں کے لاپتہہونے کی اطلاع ہمیں نہیں دے رہا ہے ۔ ہم بچاؤ کارروائی آج صبح 6بجے سے دوبارہ شروع کریں گے ۔ ہم نے بچاؤ کارروائی کے لئے کوئی وقت کی حد طے نہیں کی ہے لیکن جب تک ہمارا کام پورا نہیں ہو جاتا ہم مہم جاری رکھیں گے ۔ ہم نے کچھ وقت کے لئے بچاؤ کارروائی  ملتوی کیہے . ” وہیں پولیس نے بتایا کہ وہ لوگ یہ تحقیقات کر رہے ہیں کہ یہ حادثہ قدرتی وجوہات کی وجہ سے ہوا تھا یا یہ انسانی ہاتھوں کا عمل ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ واقعہ میں کم از کم 145گھروں کو نقصان پہنچا ہے ۔ ایک عینی شاہد کلراتھنا نے بتایا، “حادثے کے وقت ہم نے زوردارآوازیں سنیں۔ ایسا لگ رہا تھا کہ بادل گرج رہے ہیں۔ ہمارے چھتوں کے ٹائلس ٹوٹ گئے اور اس سے کالا پانیہمارے گھروں کے اندر آنے لگا۔ ہم گھروں کے اندر پھنس گئے اور باہر نکلنے کی کوشش کرنے لگے ۔ کچھ دیر بعد ہم وہاں بری طرف پھنس گئے اور ہم نے مدد کی اپیل کی اور ہمیں محفوظ طریقے سے باہر نکال لیا گیا. یہ حادثہ جمعہ کی رات کو اس وقت ہوا جب تامل اور سنہالی برادری کے لوگ اپنے روایتی نئے سال کا جشن منا رہے تھے ۔ مقامی شہریوں نے پہلے بھی یہاں سے کوڑے کے ڈھیر کو ہٹانے کے لئے حکومت پر زور دیا تھا اور یہ معاملہ سری لنکائی پارلیمنٹ میں بھی گونجا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT