Saturday , September 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / سری لنکا کی آسٹریلیا کو سیریزمیں شکست پر نظریں مرکوز

سری لنکا کی آسٹریلیا کو سیریزمیں شکست پر نظریں مرکوز

گال ، 3 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکا کے تجربہ کار اسپنر رنگنا ہیراتھ اپنی بہترین بولنگ کے ذریعے عالمی نمبر ایک آسٹریلیا کو زیر کرکے 17 سال بعد سیریز جیتنے کیلئے پرامید ہیں۔ سری لنکا اور آسٹریلیا کے درمیان سیریز کا دوسرا ٹسٹ 4 اگست کو شروع ہوگا۔ ہیراتھ نے پالیکلے میں کھیلے گئے سیریز کے پہلے میچ میں آسٹریلیا کے 9 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا تھا جہاں سری لنکا نے میچ آسانی سے جیت لیا جبکہ گال میں بہترین ریکارڈ کے باعث وہ اپنی ٹیم کو دوبارہ جتوانے کیلئے تیار ہیں۔ آسٹریلیا کے کوچ ڈارن لیمن اعتراف کرچکے ہیں کہ سری لنکا کے جنوب مغربی ساحلی علاقے کی صورتحال میزبان ٹیم کی اسپن بولنگ کیلئے سازگار ہوگی۔ انھوں نے کہا، ’’میرے خیال میں وکٹ پہلے دن سے ہی اسپنرز کیلئے سازگار ہوگی‘‘۔ ہیراتھ نے گال میں گزشتہ سال نومبر میں ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ میں 10 وکٹیں حاصل کئے تھے جبکہ تین ماہ قبل ہندوستان کے خلاف دوسری اننگز میں مضبوط بیٹنگ کوپریشان کرتے ہوئے فاتحانہ 7 وکٹیں حاصل کئے تھے۔ سری لنکا کے کپتان انجیلو میتھیوز کا کہنا ہے کہ 38 سالہ ہیراتھ نے پہلے ٹسٹ میں ایک دفعہ پھر اپنی شاندار کارکردگی دکھائی جبکہ نوجوان بلے باز کوشل مینڈیس نے شاندار 176 رنز کی اننگز کھیلی تھی۔ مینڈیس کی اسی اننگز کی بدولت سری لنکا والے مہمان ٹیم کو معقول ٹارگٹ دینے میں کامیاب ہوئے تھے جبکہ دیگر بلے بازوں میں سے کوئی ایک بھی نصف سنچری بھی نہیں بنا سکا تھا۔

 

میتھیوز کا اپنی ٹیم کو خبردار کرتے ہوئے کہنا ہے کہ’’یہ ہمارے لئے بہت اچھا موقع ہے، ہم آئی سی سی کی درجہ بندی میں ساتویں نمبر پر ہیں اور آسٹریلیا پہلے نمبرپر موجود ہے، ہمیں سیریز میں کامیابی کیلئے گال ٹسٹ میں جیت کی ضرورت ہے‘‘۔ واضح رہے سری لنکن ٹیم اس سے قبل 1999ء میں آسٹریلیا کے خلاف 0-1 سے سیریز جیتنے میں کامیاب ہوئی تھی جب ہیراتھ اپنے کریئر کا پہلا ٹسٹ میچ کھیل رہے تھے۔  29 سالہ میتھیوز نے کہا کہ جب ہم سیریز جیتے تھے اس وقت میں بہت چھوٹا تھا۔ سری لنکن ٹیم گال ٹسٹ کیلئے ممکنہ طور پر پہلے ٹسٹ کی کامیاب ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کرے گی جبکہ آسٹریلیا اپنے اسپنر اسٹیو او کیفی کے بغیر میدان میں اترے گی۔ آسٹریلیا نے کیفی کی جگہ بائیں ہاتھ کے اسپنر جون ہولاند کو متبادل کے طور پر بلالیا ہے۔ آسٹریلیا کے ہیڈ کوچ کا کہنا ہے کہ وہ دراز قامت ہیں اور بولنگ کیلئے اچھی پوزیشن میں ہیں اور مجھے یقین ہے کہ وہ یہاں کامیاب ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT