Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / سری نگر کے چٹبل علاقہ میں تین مکانات تعمیر کے بعد مکینوں کے حوالے

سری نگر کے چٹبل علاقہ میں تین مکانات تعمیر کے بعد مکینوں کے حوالے

رائزنگ کشمیر فاونڈیشن ، سیاست ملت فنڈ اور فیض عام ٹرسٹ کی مشترکہ کوششیں کامیاب
حیدرآباد ۔ 15 ۔ ستمبر : ( نمائندہ خصوصی ) : وادی کشمیر میں عوام گذشتہ سال کے تباہ کن سیلاب کے اثرات سے ہنوز باہر نکل نہیں پائے ہیں ۔ سیلاب کی تباہی و بربادی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ اس وقت 261361 عمارتوں کو نقصان پہنچا تھا جب کہ کئی علاقوں میں درجنوں مکانات زمین دوز ہوگئے تھے ۔ 3.27 ہیکڑ زرعی اور 3.96 باغبانی کی اراضی پر کھڑی فصلیں و پیداوار اس سیلاب کی نذر ہوگئی تھی ۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے سیلاب کے بعد ریاست کا تین مرتبہ دورہ کیا ۔ پہلے انہوں نے 1000 کروڑ روپئے کی امداد کا اعلان کیا ۔ اکٹوبر میں 725 کروڑ روپئے کی امداد دینے کی بات کی اور پھر جون میں ان کی حکومت نے 2437 کروڑ روپئے کی اضافی امداد فراہم کرنے کا اعلان کیا ۔ حالانکہ اس وقت کی کانگریس ۔ نیشنل کانفرنس مخلوط حکومت نے سیلاب کی تباہ کاریوں سے نمٹنے اور عوام کی باز آبادکاری کے لیے جملہ 44000 کروڑ روپئے کی مالی امداد فراہم کرنے کا مطالبہ کیا تھا ۔ لیکن حکومت نے نہ صرف اس مطالبہ کو مسترد کردیا بلکہ جس امداد کا اعلان کیا گیا ، اس امداد سے ریاست ہنوز محروم ہے ۔ مرکزی حکومت کی بے حسی کے خلاف مختلف تنظیموں نے 7 ستمبر کو احتجاجی مظاہرے بھی کئے ۔ بہر حال کشمیر سیلاب کے متاثرین کی مدد کے لیے بیرونی ریاست سے پہنچنے والی تنظیموں اور اداروں میں سیاست اور فیض عام ٹرسٹ سرفہرست ہیں ۔ سیاست ملت فنڈ اور فیض عام ٹرسٹ نے متاثرین کی ہر لحاظ سے مدد کی ۔ انہیں لاکھوں روپئے مالیتی ادویات ، بچوں کی خوراک ، ایمبولنس وغیرہ فراہم کیے گئے ۔ ساتھ ہی بعض علاقوں میں تباہ حال مکانات کی تعمیر کا بیڑہ بھی اٹھایا ۔ اس فلاحی کام میں سیاست ملت فنڈ اور فیض عام ٹرسٹ کو رائزنگ کشمیر فاونڈیشن کا بھر پور تعاون حاصل رہا ۔ چنانچہ سری نگر کے چٹبل علاقہ میں بے شمار مکانات منہدم ہوئے اس علاقہ پر سیاست ملت فنڈ اور فیض عام ٹرسٹ نے خصوصی توجہ دی جس کے نتیجہ میں تین مکمل طور پر تباہ شدہ مکانات کی از سر نو تعمیر کرتے ہوئے انہیں مکینوں کے حوالے بھی کردیا گیا ۔ واضح رہے کہ ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں ، منیجنگ ایڈیٹر سیاست جناب ظہیر الدین علی خاں ، سکریٹری فیض عام ٹرسٹ جناب افتخار حسین اور ٹرسٹی جناب رضوان حیدر و دیگر پر مشتمل ایک وفد نے کشمیر پہنچ کر سیلاب کے نقصانات اور اپنے اداروں کے امدادی کاموں کا جائزہ لیا تھا ۔ ٹرسٹی رائزنگ کشمیر فاونڈیشن اور ممتاز ماہر اطفال ڈاکٹر الطاف حسین اور ایڈیٹرانچیف رائزنگ کشمیر ڈاکٹر شجاعت بخاری نے راحت و بچاؤ سرگرمیوں کی نگرانی کی اور ایسے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا جو سیلاب کے بعد ناقابل رسائی علاقوں میں تبدیل ہوگئے تھے ۔ ڈاکٹر شجاعت حسین کے مطابق سیلاب سے متاثرین کی حالت آج تک سدھر نہیں پائی ۔ عوام امداد کے منتظر ہیں ۔ سیلاب میں ان کا سب کچھ برباد ہوگیا ۔ تین مکانات کی حوالگی کے موقع پر علاقہ کے عوام نے جہاں رائزنگ کشمیر فاونڈیشن کی ستائش کی وہیں سیاست ملت فنڈ اور فیض عام ٹرسٹ سے اظہار ممنونیت کرتے ہوئے کہا کہ متاثرین سیلاب کی مدد کے لیے حیدرآباد کے ان دو اداروں نے پہنچ کر غیر معمولی خدمات انجام دیں ۔ واضح رہے کہ چٹبل ستمبر 2014  کے سیلاب میں سری نگر کے متاثرہ علاقوں میں سب سے زیادہ متاثر ہوا ۔ تینوں مکانات کی تعمیر رائزنگ کشمیر فاونڈیشن کی ٹیم کی نگرانی میں عمل میں آئی ۔ اس موقع پر ایڈیٹرانچیف رائزنگ کشمیر شجاعت بخاری نے کہا کہ آر کے ایف ہمیشہ متاثرین سیلاب کی مدد کے لیے پیش پیش رہی اور ہم نے عیدالاضحی سے قبل مکانات کی تعمیر مکمل کرنے کو یقینی بنایا ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT