Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / سستی شراب پالیسی سے دستبرداری تک حکومت کا تعاقب

سستی شراب پالیسی سے دستبرداری تک حکومت کا تعاقب

دفتر محکمہ آبکاری کا گھیراؤ ، سی پی آئی قائدین کا احتجاج
حیدرآباد۔24اگست(سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ کی سستی شراب پالیسی کی شدت کے ساتھ مخالفت کرتے ہوئے کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا ساوتھ زون یونٹ نے ریاستی محکمہ آبکاری کے دفتر کا آج گھیرائو کیا۔ سی پی آئی کے رکن اسمبلی رویندر نائک اور کنونیر ساوتھ زون ای ٹی نرسمہاکی قیادت میں منعقدہ احتجاجی پروگرام میں کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کی محاذی تنظیمیں اے آئی ایس ایف‘ ڈی وآئی آئی ایف‘ تلنگانہ مہیلا سمکھیا کے سینکڑوں کارکنوں نے بھی حصہ لیا۔ بعد ازاںرکن اسمبلی رویندر نائک اور ای ٹی نرسمہاکے بشمول تمام احتجاجیو ںکو پولیس نے گرفتار کرتے ہوئے کمیونسٹ قائدین اور کارکنوں کے منصوبے کو ناکام بنادیا۔ اس دوران میڈیا سے بات کرتے ہوئے رکن اسمبلی رویندر نائک نے کہاکہ حکومت پندرہ ماہ کے طویل عرصہ کے بعد بھی اپنے انتخابی وعدوں کی تکمیل میںناکام ہے اور اپنی خامیوں و کوتاہیوں کی پردہ پوشی کے لئے ریاست کی عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ مسٹر رویند رنائک نے حکومت تلنگانہ کو کے جی تا پی جی مفت تعلیم‘ طبی سہولتوں کی فراہمی اور ہر نوجوانوں کو نوکری دینے کے اپنے وعدے کے بجائے ریاست میں سستی شراب کوعام کرتے ہوئے نوجوانوں کی زندگیو ںکو برباد کرنے کے منصوبے رکھتی ہے ۔ مسٹر رویندر نائک نے کہاکہ بڑھتے جرائم میں ریاست تلنگانہ کو پورے ملک میںساتواں مقام حاصل ہے اور سستی شراب عام ہونے کے بعد عصمت ریزی اور قتل وغارت گری کے واقعات میں شدت کے ساتھ اضافہ ہونے کا امکان ظاہر کیا ۔ انہوں نے کہاکہ ایک سازش کے تحت حکومت تلنگانہ دیہی علاقوں میں سستی شراب کو عام کررہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ حیدرآباد کے بشمول ریاست کے کسی بھی ضلع میں سستی شراب کو عام کرنے سے ریاست میں بدنظمی اور جرائم میں اضافہ ہوگا۔ انہوں نے حکومت تلنگانہ سے اپنی سستی شراب پالیسی سے دستبرداری اختیار کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے سخت انتباہ دیا اور کہاکہ کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا شراب کے مسئلہ پر ہرگز خاموشی اختیار نہیں کریگی۔انہوں نے شراب پالیسی سے دستبرداری تک حکومت کا تعاقب کرنے کا بھی اس موقع پر اعلان کیا۔

TOPPOPULARRECENT