Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / سعودی عرب ، قرآن و سنت کی پیروی اور سلف صالحین کے منہج پر گامزن

سعودی عرب ، قرآن و سنت کی پیروی اور سلف صالحین کے منہج پر گامزن

غلط فہمیوں کے ازالہ پر زور ، امام حرم کعبہ فضیلتہ الشیخ صالح بن محمد بن ابراہیم آل طالب حفظہ اللہ کا خطاب
حیدرآباد۔ 6 اپریل (سیاست نیوز) سعودی عرب ، قرآن و سنت کی پیروی اور سلف صالحین کے منہج پر گامزن ہے۔ عالم اسلام میں پھیل رہی غلط فہمیوں کو دُور کرنے کیلئے یہ ضروری ہے کہ ہم سنت اور صحابہ کی تعلیمات پر عمل پیرا ہوں۔ امام ِحرم ِکعبہ فضیلۃ الشیخ صالح بن محمد بن ابراہیم آل طالب حفظہ اللہ نے آج جامع مسجد محمدیہ، لنگر حوض دفتر جمعیت اہل حدیث میں منعقدہ عظیم الشان اجلاس سے خطاب کے دوران یہ بات کہی۔ اس موقع پر ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی، ریاستی وزیر داخلہ مسٹر نائنی نرسمہا ریڈی، سیکریٹری محکمہ اقلیتی بہبود جناب عمر جلیل کے علاوہ دیگر موجود تھے۔ امامِ کعبہ نے بتایا کہ دین حق سے وابستگی اور سلف صالحین سے تعلق پر ہی نجات ممکن ہے۔ علمائے کرام سے وابستگی درحقیقت دین سے وابستگی ہے۔ انہوں نے دفاع صحابہؓ کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ دشمنان اسلام گھناؤنی سازشوں کے ذریعہ کئی چیزوں کو دین میں داخل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ انہوں نے دہشت گردی کو بدترین المیہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سے دنیا کا ہر ملک متاثر ہے اور اب سعودی عرب بھی ان خطرات کا سامنا کررہا ہے۔ امام حرم نے بتایا کہ توہین صحابہؓ کے مرتکب دراصل اسلام کو منقسم کرنے کے درپے ہیں۔ شر و فساد کی جس طرح سازش کی جارہی ہے، وہ انتہائی خطرناک ہے لیکن اللہ کا فضل ہے کہ لوگ جانتے ہیں کہ صحابہؓ کا مرتبہ کیا ہے اور سلف صالحین کس کے منہج پر عمل پیرا رہے۔ انہوں نے بتایا کہ سعودی حکومت ہر ملک میں موجود تمام اہل اسلام سے محبت کرتی ہے اور انہیں محبت ہی کے عنوان پر متحد رکھے ہوئے ہے۔ انہوں نے بتایا کہ امت مسلمہ کو یہ ظاہر کرنا ہوگا کہ ہم دہشت گردی سے بیزار ہیں اور ہر طرح کی انتہا پسندی کا مقابلہ کرنے کے حق میں ہیں۔ فضیلۃ الشیخ صالح بن محمد بن ابراہیم نے امت مسلمہ کو مشورہ دیا کہ وہ ایک دوسرے کے ساتھ بھائی چارگی و احترام کا مظاہرہ کرنے کے ساتھ اس بات سے بھی چوکنا رہیں کہ دین کا استعمال نفرت و کراہیت کیلئے نہ کیا جائے۔

انہوں نے بتایا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم اور صحابہؓ کی حقانیت بتانے میں کسی قسم کا پس و پیش نہ کیا جائے بلکہ حق بیانی کے ذریعہ گستاخ صحابہ و انبیاء کو جواب دیں اور اس کے لئے قرآن و حدیث، اقوال صحابہ کو ذریعہ بنائیں۔ انہوں نے اہل حدیث کی خدمات کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ اہل حدیث دراصل سنت اور صحابہ کے دفاع میں سرگرم عمل ہیں۔ امام حرم نے اس موقع پر فلسطین کے علاوہ عالم اسلام میں پریشان حال مسلمانوں کیلئے دعا کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تمام مسلمانوں کو آزمائش، فتنہ و فساد اور ظالموں سے محفوظ رکھے۔ امام حرم مکی نے بتایا کہ سعودی حکمراں طبقہ اللہ کے فضل و کرم سے حجاج کرام کی خدمات کے ساتھ سنت نبویؐ اور احکام الٰہی پر عمل پیرا ہے۔ انہوں نے کتاب و سنت اور سلف صالحین کے منہج کو اختیار کرنے کی تلقین کرتے ہوئے کہا کہ جب کبھی امت سنت  اور سلف و صالحین سے دوری اختیار کرنے کی مرتکب ہوئی اسے کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑا۔ اس موقع پر سعودی عرب سے دیگر مہمانوں کے علاوہ سعودی سفارتی عہدیدار بھی موجود تھے۔ بعداز خطاب امام حرم نے صلوۃ الظہر کی امامت کی۔ اجلاس میں جمعیت اہل حدیث کے ذمہ داران کے علاوہ جناب جابر پٹیل، جناب عتیق صدیقی خرم اور دیگر موجود تھے۔ جناب محمد محمود علی ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ کے علاوہ ریاستی وزیر داخلہ مسٹر این نرسمہا ریڈی نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT