Thursday , August 24 2017
Home / دنیا / سعودی عرب سے امریکہ کی ناراضگی کی وجہ؟

سعودی عرب سے امریکہ کی ناراضگی کی وجہ؟

ہوسٹن ۔ 5 مئی (سیاست ڈاٹ کام) خام تیل کی قیمتوں میں کمی کی وجہ سے کارپوریٹ امریکہ کی تاریخ میں زبردست اتھل پتھل مچ چکی ہے جہاں تیل اور گیس کی 59 کمپنیاں دیوالیہ کے قریب ہیں۔ رائٹرس ڈیٹا، قانونی فرہینس اینڈ بون اور بینک رپسٹی ڈیٹا ڈاٹ کام کے مطابق امریکہ ہی اب دیوالیہ ہونے والی کمپنیوں کا موقف 68 فلنگس تک پہنچ گیا ہے جو 2002ء اور 2003ء کے ٹیلیکام اسکام کے دوران دیکھا گیا تھا۔ ٹیکساس کی اکین گمپ نامی کمپنی کے شراکت دار چارلس گبس نے بتایا کہ امریکی تیل صنعت نے اپنے دیوالیہ پن کے نصف مرحلہ کو بھی پار نہیں کیا ہے اور ہمیں اندیشہ ہیکہ دوسرے سہ ماہی میں مزید فلنگس کے موقف میں ہوں گے۔ پہلے سہ ماہی میں تیل اور گیس کی 15 کمپنیوں نے دیوالیہ کا اعلان کیا تھا۔ دوسری طرف تیل پیدا کرنے والے بعض ممالک اور کمپنیاں اس انتظار میں ہیں کہ تیل کی قیمتوں میں آج نہیں تو کل ضرور اضافہ ہوگا۔ فروری میں تیل کی قیمت جس طرح انحطاط پذیرہوئی اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ 27 ڈالرس فی بیارل تیل دستیاب تھا جبکہ صرف دو سال قبل ہی یہ قیمت 100 ڈالرس فی بیارل تھی۔ امریکی شیل تیل کمپنیاں تیل کی انحطاط پذیر قیمتوں سے پریشان ہیں جس کی وجوہات یہ بتائی جارہی ہیں کہ امریکہ نے ایک تو تیل کی پیداوار ضرورت سے زیادہ کرلی اور دوسری طرف سعودی عرب نے اوپیک کو اس کی تیل کی پیداوار میں کٹوتی سے انکار کردیا تھا تاکہ تیل کی قیمتوں میں وازن برقرار رہے۔ سعودی عرب جس کو تیل کی پیداوار یں 10 ڈالر فی بیارل سے بھی کم کے اخراجات ہوتے ہیں اور مزید برآں سعودی عرب سے یہ توقع کی جارہی تھی کہ وہ تیل کی قیمتوں میں کٹوتی کے باوجود تیل کی پیداوار میں اضافہ کرے گا تاکہ امریکی شیل تیل کی کمپنیوں کو مسابقتی منظر نامہ سے ہٹادے۔

TOPPOPULARRECENT