Wednesday , September 20 2017
Home / عرب دنیا / سعودی عرب میں تاریخ کی سب سے بڑی فوجی مشقیں

سعودی عرب میں تاریخ کی سب سے بڑی فوجی مشقیں

’’شمال کی گرج ‘‘نامی مشقوں میں پاکستان سمیت 20 ممالک کی شرکت
ریاض۔ 15 فروری (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب میں خطہ کی تاریخ کی سب سے بڑی اور اہم فوجی مشقوں میں شرکت کرنے والے ممالک کے دستے مملکت پہنچ رہے ہیں۔ ’’شمال کی گرج‘‘ کے نام سے ان مشقوں کا انعقاد سعودی عرب کے شمالی شہر حفر الباطن کے کنگ خالد ملٹری سٹی میں کیا جارہا ہے۔ ملکوں کی تعداد کے لحاظ سے یہ سب سے بڑی فوجی مشقیں شمار کی جا رہی ہیں جس میں 20 ’’عرب‘‘ اور ’’برادر مسلم ‘‘ممالک کے علاوہ خلیج کے 6 ممالک کی مشترکہ فوج بھی شریک ہیں۔ سعودی سرکاری نیوز ایجنسی (SPA) کے مطابق مشقوں میں شریک ممالک یہ ہیں : سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، اردن، بحرین، سینیگال، سوڈان، کویت، مالدیپ، مراقش ، پاکستان، چاڈ، تیونس، جیبوتی، کوموروس،سلطنت ِعمان، قطر، ملائیشیا، مصر، موریطانیا اور ماریشیس۔’’شمال کی گرج‘‘ کے نام سے ہونے والی یہ مشقیں شریک ممالک کی تعداد اور مختلف اقسام کے فوجی ساز و سامان کے علاوہ جدید ترین ہتھیاروں اور اسلحہ کے لحاظ سے اپنی نوعیت کی سب سے بڑی مشق ہے۔ مشقوں میں 20 ممالک کے جدید ترین جنگی طیاروں، توپوں، ٹینکوں، فوجی دستوں، طیارہ شکن نظام، بحری افواج کی وسیع پیمانے پر شرکت ، صلاحیتوں کے اس حجم اور اعلی درجہ کی عکاس ہے جو یہ ممالک رکھتے ہیں۔یہ مشق اس بات کا بھی واضح پیغام ہے کہ سعودی عرب اور اس کے دوست اور برادر ممالک تمام تر چیلنجوں کا مقابلہ کرنے اور خطہ کا امن واستحکام برقرار رکھنے کیلئے ایک ہی صف میں کھڑے ہیں۔ ساتھ ہی یہ ان متعدد مقاصد کو بھی باور کرا رہی ہے جو خطہ اور پوری دنیا کے امن کیلئے مکمل تیاری کے دائرہ کار میں شامل ہیں۔ تجزیہ کاروں کے خیال میں ’’شمال کی گرج‘‘ مشق اس بات کی تصدیق کررہی ہے کہ شریک ممالک کی قیادت خطے میں امن کے تحفظ اور استحکام کو یقینی بنانے کیلئے سعودی عرب کے ویژن سے مکمل اتفاق رکھتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT