Thursday , September 21 2017
Home / عرب دنیا / سعودی عرب میں منشیات کے تین اسمگلرس کو سزائے موت

سعودی عرب میں منشیات کے تین اسمگلرس کو سزائے موت

ریاض ۔ 17 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب نے منشیات کی اسمگلنگ کے جرم کے مرتکب دو یمنیوں اور اپنے ایک شہری کو آج پھانسی پر لٹکا دیا جس کے ساتھ ہی رواں سال کے دوران سزائے موت پانے والے افراد کی تعداد 63 تک پہنچ گئی۔ سعودی عرب کے شہری ضیف اللہ العمرانی کو شمالی علاقہ تبوک سزائے موت دی گئی ، جنہیں نشیلی دوا کی اسمگلنگ کا مرتکب پایا گیا تھا ۔ جنوب مغربی شہر جزان میں دو یمنیوں احمد مبارک اور عبدالسلام الجمالی کو دئی گئی سزائے موت پر تعمیل کرتے ہوئے گولی ماردی گئی۔ ان دونوں پر حشش کی اسمگلنگ کے الزامات ثابت ہوچکے تھے۔ سعودی عرب میں بالعموم گولی مارکر یا تلوار کے ذریعہ سر قلم کرتے ہوئے سزائے موت پر تعمیل کی جاتی ہے۔ اس مملکلت میں 2 جنوری کو صرف ایک دن میں سزائے موت پر تعمیل کرتے ہوئے 47 افراد کے سر قلم کئے گئے تھے۔

 

روس،سعودی عرب میں تیل کی موجودہ پیداواربرقرار
دوحہ۔ 17 فروری (سیاست ڈاٹ کام) روس اور سعودی عرب نے تیل کی پیداوار کو موجودہ سطح پر برقرار رکھنے پر اتفاق کیا ہے۔ قطر کے دار الحکومت دوحہ میں ہونے والے اجلاس میں سعودی عرب ، قطر ، وینزویلا اور روس کے وزرائے تیل نے فیصلہ کیا کہ تیل کی قیمتوں کو مستحکم کرنے کیلئے پیداوار کو جنوری کی سطح پر روکا جائے۔ سعودی عرب کے وزیر تیل علی النعیمی نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک تیل کی قیمتوں میں کوئی بڑی تبدیلی نہیں چاہتا لیکن قیمتیں طلب کے مطابق اور مستحکم ہونی چاہئیں۔اس دوران تہران سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ایران نے بھی خام تیل کی پیداوار تخفیف کیلئے قطر کی تجویز کو نظرانداز کر دیا ہے اور کہا کہ تہران اپنے خام تیل کی پیداوار میں کمی کا کوئی ارادہ نہیں رکھتا۔

TOPPOPULARRECENT