Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / سعودی عرب میں موت کی سزا پانے والے ہندستانی شہری کی واپسی

سعودی عرب میں موت کی سزا پانے والے ہندستانی شہری کی واپسی

کفیل تاجر نے خون بہا کے طورپر 1.3ملین سعودی ریال مقتول کے خاندان کو ادا کرکے رہائی دلائی
حیدرآباد6مارچ ( یو این آئی)گزشتہ دس سال سے سعودی عرب میں قید کی سزا بھگتنے والاسی لمبادری واپس آگیا ۔ تلنگانہ کے ضلع نظام آباد کے آرمور منڈل کے باشندہ لمبادری ملازمت کے سلسلہ میں سعودی عرب گیا ہوا تھا۔وہ وہاں زرعی مزدور کے طور پر کام کرتا تھا ۔50سالہ لمبادری کو وہاں نجران ٹاون میں موت کی سزا سنائی گئی تھی ۔اسے گزشتہ ہفتہ نجران کی جیل سے ریاض کی سنٹرل جیل منتقل کرنے کے بعد رہا کردیا گیا جس کے بعد وہ گزشتہ روز حیدرآباد پہنچا جہاں سے وہ اپنے آبائی ضلع نظام آباد روانہ ہوا۔لمبادری نے بتایا کہ اس نے ایک مرحلہ پر اپنی رہائی کی امید چھوڑ دی تھی تاہم قدرت کا یہ کرشمہ رہا کہ اسے سعودی عرب کے ایک تاجر شیخ عود ال قریہ نے بچایا جنہوں نے 1.3ملین سعودی ریال (تقریبا2.3کروڑ روپئے )کی رقم خون بہا کے طورپر سعودی عرب کے مقتول شہری کے خاندان کو دیئے ۔ لمبادری نے مزید کہا کہ اسے یقین نہیں ہورہا ہے کہ وہ اپنے وطن اور اپنے آبائی ضلع واپس آگیا ہے ۔لمبادری نجران میں زرعی مزدور کے طور پر کام کرتا تھا ۔سال 2006میں پڑوسی سعودی کسان سے جانوروں کے چرانے کے مسئلہ پر اس کی تکرار ہوگئی اور جھگڑے کے دوران اس نے سعودی کے اس شخص کو دھکیل دیا جو نیچے گر گیا ۔بعد ازاں اسپتال میں اُس شخص کی موت ہوگئی ۔لمبادری کو پولیس نے گرفتار کر لیا اور عدالت نے اسے موت کی سزاسنائی۔

TOPPOPULARRECENT