Tuesday , October 17 2017
Home / عرب دنیا / سعودی عرب میں ویژن 2030 منظور

سعودی عرب میں ویژن 2030 منظور

معاشی اصلاحات کا اعلان، گرین کارڈ جاری کرنے کی تجویز
ریاض ۔ 25 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب کی کابینہ نے آج اصلاحات پر مبنی ویژن 2030 کو منظوری دے دی جس کا طویل عرصہ سے انتظار کیا جارہا تھا۔ تیل کی دولت سے مالامال سعودی عرب نے اپنی معاشی پالیسی میں تبدیلی کا واضح اشارہ دیا ہے۔ ویژن 2030 میں دنیا کی سب سے بڑی تیل کی کمپنی نے حصص کا منصوبہ اور دنیا کا سب سے بڑا سرکاری انوسٹمنٹ فنڈس کے قیام کا منصوبہ بھی شامل ہے۔ شاہ سلمان نے آج ٹیلیویژن پر مختصر خطاب کرتے ہوئے ویژن 2030 کی منظوری کا اعلان کیا۔ ولیعہد محمد بن سلمان نے پہلے سے ریکارڈ کئے گئے انٹرویو میں اس پروگرام کی تفصیلات بتائی۔ انہوں نے کہا کہ اب تک سعودی عرب کا زیادہ انحصار تیل پر تھا لیکن یہ پالیسی تبدیل کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشی سطح پر استحکام کیلئے ہمیں دیگر ذرائع بھی تلاش کرنا ضروری ہے۔ اصلاحات کے ذریعہ مکان اور بیروزگاری کے خاتمہ یقینی بنایا جائے گا اور ساتھ ہی ساتھ پانی اور توانائی کے شعبہ میں سبسیڈی انہیں دی جائے گی جو ضرورتمند ہو۔ تیل کے شعبہ سے ہٹ کر دیگر شعبوں کے ذریعہ آمدنی میں اضافہ کیلئے کانکنی میں زیادہ سرمایہ کاری کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ ایک نئے رہائشی ویزا پروگرام کی بھی تجویز ہے جس کے ذریعہ حکومت کو زائد آمدنی ہوگی ۔ یہ ریسیڈنسی ویزا گرین کارڈ طرز کا ہوگا جہاں سعودی عرب کا دورہ کرنے والے مسلمانوں کو ملک میں طویل عرصہ تک رہنے کی گنجائش فراہم رہے گی۔ انہوں نے بتایا کہ سعودی عرب آنے والے لاکھوں مسلمانوں کو ہمہ اقسام کی ویزا سہولیات فراہم کرنے کا منصوبہ ہے جس کے ذریعہ جہاں انہیں اسلامی تہذیب و ثقافت سے واقفیت ہوگی وہیں سعودی عرب کو بھی اضافی آمدنی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ طویل عرصہ تک سعودی عرب تیل پر انحصار کرتا رہا لیکن اب وقت آ گیا ہیکہ اس پالیسی میں تبدیلی کی جائے اور آمدنی کے دیگر ذرائع بھی تلاش کئے جائیں جس کے ذریعہ ملک میں بیروزگاری کو ختم کیا جاسکے گا اور ترقی یقینی ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT