Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / سعودی عرب کے اقتصادی و سماجی شعبوں میں جامع اصلاحات

سعودی عرب کے اقتصادی و سماجی شعبوں میں جامع اصلاحات

امریکی صدر ٹرمپ کے عزائم خوش آئند، اتحادیوں میں یکسانیت : نائب ولیعہد محمد بن سلمان

واشنگٹن ۔ /22 اپریل (سیاست ڈاٹ کام ) سعودی عرب کے نائب ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی اخبار ’واشنگٹن پوسٹ‘ کو دیے گئے تفصیلی انٹرویو میں کہا ہے کہ ان کا ملک پورے یقین اور اعتماد کے ساتھ اقتصادی، سماجی اور تفریحی ترقیاتی شعبوں میں جامع اصلاحات پر کام کر رہا ہے۔امریکی اخبار ’واشنگٹن پوسٹ‘ کے نامہ نگار ڈیوڈ اگناطیوس کو انٹرویو میں شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ سعودی قوم کی منزلیں آسمانوں سے بھی آگے ہیں۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ ہونے والی ملاقات پر تبصرہ کرتے ہوئے شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ انہیں ٹرمپ سے مل کران کا موقف جان کرخوشی ہوئی۔ ٹرمپ امریکا کوصحیح سمت میں آگے لے جانے کا عزم رکھتے ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ امریکاکے اتحادیوں کو واشنگٹن میں جمع کرنے کے لیے تیار ہیں۔سعودی عرب میں ترقیاتی شعبوں اور معاشی میدان میں انقلابی تبدیلیوں کے آغازکے دو سال پورے ہونے پر بات کرتے ہوئے سعودی نائب ولی عہد نے کہا کہ سعودی عرب پورے اعتماد کے ساتھ طے شدہ ٹائم فریم کے مطابق ملک میں اقتصادی اور سماجی تبدیلیاں لارہا ہے۔ریاض میں شہزادہ محمد بن سلمان کے دفتر میں لیا گیا یہ انٹرویوان کا حالیہ مہینوں میں سب سے طویل مکالمہ ہے۔اپنے اس انٹرویو میں سعودی نائب ولی عہد نے خارجہ پالیسی، سعودی تیل کمپنی ارامکو کے شیئرزمیں شراکت، مقامی صنعت میں سرمایہ کاری کی پالیسی، تفریحی شعبے میں ڈویلپمنٹ اور دیگر اہم امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔امریکی اخبار کود یے گئے انٹرویو میں شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ اصلاحات کی جوہری اور بنیادی شرط عوام کی طرف سے تبدیلی کی رغبت کا اظہار ہے۔ تشویش کی بات یہ ہے کہ اگر عوام تبدیلی کے لیے تیار نہ ہوں۔ موجودہ حالات میں سعودی قوم تبدیلی کے لیے مکمل طور پر قانع ہے۔ ہماری منزل اورعزائم آسمانوں سے بلند ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سعودی نوجوانوں اور ہرعمر اور طبقے کے افراد میں تبدیلی کی امنگ موجود ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ رائے عامہ کے ایک مرکز کے چیئرمین عبداللہ الحقیل انہیں بتایا کہ ایک تازہ سروے میں 85 فی صد شہریوں نے کہا کہ وہ حکومت کی موجودہ پالیسیوں اور تبدیلی کی ترجیحات کو پسند کرتے ہیں۔ انہیں مجبور نہیں کیا گیا، موجودہ حکومت دوسری انتظامیہ سے مختلف ہے۔77 فی صد کا کہنا ہے معاشی اصلاحات کے ویڑن 2030ء کی پر زور حمایت کرتے ہیں۔ 82 فیصد نے ملک میں حکومت کے تفریحی منصوبوں کی مکمل تائید اور حمایت کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT