Sunday , July 23 2017
Home / عرب دنیا / سعودی ولیعہد استغاثہ کے اختیار سے محروم

سعودی ولیعہد استغاثہ کے اختیار سے محروم

ریاض۔/17جون، ( سیاست ڈاٹ کام ) سعودی عرب کے شاہ سلمان نے آج ایک شاہی فرمان جاری کرتے ہوئے اپنے ملک کے نظام استغاثہ کی دوبارہ ڈھانچہ بندی کی ہے جس کی رو سے ان کے بھتیجہ اور ولیعہدمحمد بن نائف بن عبدالعزیز لازمی طور پر استغاثہ کے اہم اختیارات سے محروم ہوجائیں گے جن میں مجرمانہ و فوجداری تحقیقات کی نگرانی کے اختیارات سے محرومی بھی شامل ہے۔ اس شاہی فرمان میں تحقیقات و استغاثہ بیورو کو دفتر عوامی استغاثہ کا نام دیا گیا ہے اور حکم دیا گیا ہے کہ نو مقرر شدہ عوامی استغاثہ راست طور پر شاہ کو ہی رپورٹ دیں۔ ولیعہدمحمد بن نائف نے جو اس مملکت کے وزیر داخلہ بھی ہیں اس بیورو کے نگران تھے اور اس کے چیرمین کی نامزدگی کا انہیں ہی اختیار حاصل تھا۔ یہ بیورو اگرچہ وزارت انصاف کا حصہ تھا لیکن پولیس اور دیگر سیکورٹی فورسیس کی نگرانی وزارت داخلہ سے منسلک تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT