Tuesday , October 24 2017
Home / شہر کی خبریں / سلطان بازار تا کوٹھی میٹرو ریل کے راستہ میں تبدیلی کا مطالبہ

سلطان بازار تا کوٹھی میٹرو ریل کے راستہ میں تبدیلی کا مطالبہ

مصروف تجارتی علاقہ کو نقصان سے بچانے پر زور ، سلطان بازار ٹریڈرس اسوسی ایشن کا بیان
حیدرآباد ۔ 15 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : سلطان بازار ٹریڈرس اسوسی ایشن نے چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے مطالبہ کیا کہ وہ تجارتی علاقہ سلطان بازار اور کوٹھی سے بچھائی جانے والی حیدرآباد میٹرو ریلوے لائن کے مجوزہ منصوبے میں تبدیلی لاتے ہوئے کاریڈر II کے رخ موڑنے کے احکامات جاری کریں تاکہ قدیم اور تاریخی تجارتی مرکز جو نظام کے دور سے چلتا آرہا ہے جس کی تجارتی سرگرمیوں کو ٹھیس پہنچانے سے بچایا جاسکے ۔ یہ بات آج یہاں جنرل سکریٹری اسوسی ایشن مسٹر سی مدھوسدھن راؤ ، کنوینر تلنگانہ ودیارتھی اودیاماکار ولا سنگھم سلطان بازار ٹریڈرس اسوسی ایشن مسٹر ڈی شنکر ، جوائنٹ سکریٹری اسوسی ایشن مسٹر خلیل احمد نائب صدر مسٹر ہریش گینی نے پریس کانفرنس میں بتائی ۔ انہوں نے بتایا کہ کوٹھی اور سلطان بازار ایک ایسا تجارتی مرکز ہے جہاں پر بلا لحاظ مذہب و ذات پات ہزاروں تجارت پیشہ اپنی گذر بسر کے لیے روزگار حاصل کیا کرتے ہیں جن میں بڑے چھوٹے اور متوسط سبھی شامل ہیں اور کہا کہ مذکورہ علاقہ میں واقع تقریبا دوکانات پر ہر امیر و غریب افراد شاپنگ کیا کرتے ہیں ۔ اس علاقہ سے اگر میٹرو ریلوے لائن گذاری جائے گی تو شہر کی معروف اور مصروف ترین مارکٹ کی برخاستگی کے علاوہ ہزارہا افراد بے روزگار اور کئی خاندان بے یار و مددگار ہوجانے کا خطرہ لاحق ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم حکومت کے مخالف نہیں ہیں بلکہ ہم چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے تحریک تلنگانہ کے دوران اور قیام تلنگانہ کے بعد دئیے گئے تیقن اور وعدے کی تکمیل کا مطالبہ کررہے ہیں جس کا انہوں نے وعدہ کیا تھا ۔ انہوں نے سلطان بازار ، کوٹھی ، بڑی چوڑی میں ایل اینڈ ٹی کی جانب سے گذشتہ ایک ہفتہ سے راتوں رات میٹرو ریل کے سروے پر اپنے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے منیجنگ ڈائرکٹر حیدرآباد میٹرو ریل مسٹر این وی ایس ریڈی چیف منسٹر اور حکومت کو غیر ضروری مشورے دیتے ہوئے گمراہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں اور ان کے مشوروں سے کئی زندگیاں اجڑنے کے قوی امکانات ہیں ۔ انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ وہ شہر کے مصروف ترین تجارتی مرکز کوٹھی اور سلطان بازار جسے ’ منی انڈیا ‘ بھی کہا جاتا ہے ۔ ریلوے لائن کے رخ کو موڑنے سے متعلق سنجیدگی سے غور کرتے ہوئے ضروری اقدامات کرے ۔ اس موقع پر اسوسی ایشن قائدین مسرز رام شٹی ، مکیش گالا ، ایس سدھیر کمار ، سی ششی بھوشن ، نور الدین ویرانی کے علاوہ دیگر موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT