Thursday , August 17 2017
Home / ہندوستان / سلمان خان کو بری کرنے کے فیصلہ کیخلاف چیلنج

سلمان خان کو بری کرنے کے فیصلہ کیخلاف چیلنج

ممبئی ۔ 20 ۔ جنوری : ( سیاست ڈاٹ کام ) : حکومت مہاراشٹرا اندرون ایک ہفتہ سپریم کورٹ میں خصوصی توجہ دہانی کی درخواست ( ایس ایل پی ) داخل کرے گی تاکہ ٹکر مار کر فرار ہونے کے کیس میں فلمی اداکار کو الزامات سے بری کردینے سے متعلق بامبے ہائی کورٹ کے فیصلہ کو چیلنج کیا جاسکے ۔ لا اینڈ جوڈیشری ڈپارٹمنٹ کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ اس خصوص میں خصوصی مرافعہ داخل کرنے کے لیے ریاستی وکلاء کو ہدایات جاری کردی گئی ہیں ۔ جس میں ہائی کورٹ کے فیصلہ کی بنیادوں ( میرٹس ) کو چیلنج کیا جائیگا ۔ توقع ہے کہ اندرون ایک ہفتہ ایس ایل پی داخل کردی جائے گی ۔ قبل ازیں چیف منسٹر مہاراشٹرا مسٹر دیویندر فڈنویس نے یہ اعلان کیا تھا کہ سلمان خاں کو منسوبہ الزامات سے بری کیے جانے کے خلاف ریاستی حکومت بہت جلد عدالت العالیہ سے رجوع ہوگی ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ قانون کے مطابق ہائی کورٹ کے فیصلہ کو اندرون 90 یوم حکومت چیلنج کرسکتی ہے ۔ بامبے ہائی کورٹ کے جسٹس اے آر جوشی نے گذشتہ سال 10 دسمبر کو 50 سالہ فلمی اداکار کو ہٹ اینڈ رن کیس 2002 کے تمام الزامات سے بری کردیا تھا ۔ انہوں نے بتایا کہ سیشن کورٹ نے آنجہانی پولیس کانسٹبل رویندر پاٹل کے بیان کو بطور گواہ قبول کرلیا تھا لیکن ہائی کورٹ نے اپنے فیصلہ میں پاٹل کے بیان کو کالعدم قرار دیا جب کہ مئی 2015 میں سیشن کورٹ جج ڈی ڈبلیو دیشپانے نے سلمان خاں کو مجرم قرار دیتے ہوئے 5 سال کی سزائے قید سنائی تھی ۔۔

TOPPOPULARRECENT