Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / سماجی تلنگانہ کے لیے جدوجہد کرنے عوام سے سی پی آئی کی اپیل

سماجی تلنگانہ کے لیے جدوجہد کرنے عوام سے سی پی آئی کی اپیل

پارٹی انحراف کی حوصلہ افزائی کرنے والے کے سی آر کا جمہوری اقدار کی باتیں کرنا مضحکہ خیز ، سی وینکٹ ریڈی
حیدرآباد ۔ 2 ۔ جون : ( این ایس ایس ) : سی پی آئی اسٹیٹ سکریٹری سی وینکٹ ریڈی نے عوام پر زور دیا کہ سماجی تلنگانہ کے لیے ٹی آر ایس حکومت کے خلاف نبرد آزما ہوجائیں ۔ آج یہاں سی پی آئی گریٹر حیدرآباد کمیٹی کے زیر اہتمام منعقدہ یوم تاسیس تلنگانہ تقریب میں حصہ لیتے ہوئے وینکٹ ریڈی نے کہا کہ بائیں بازو ، پروگریسیو اور جمہوری طاقتیں ریاست تلنگانہ میں 2019 تک ایک متبادل طاقت کے طور پر ابھریں گی ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ریاست کی ترقی اور عوام کے لیے فلاح و بہبود کے اقدامات کرنے کے بجائے پارٹی انحراف میں صد فیصد کامیابی حاصل کی ہے ۔ کے سی آر کے اس بیان پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہ ریاست میں کوئی سیاسی کرپشن نہیں ہے وینکٹ ریڈی نے کہا کہ گذشتہ دو سال میں سیاسی بدعنوانیوں میں بہت اضافہ ہوا ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ تلنگانہ سے دغا کرنے والے چیف منسٹر کے دائیں اور بائیں ہاتھ بن گئے ہیں ۔ کے سی آر کے یہ کہنے پر اعتراض کرتے ہوئے کہ علحدہ ریاست تلنگانہ کا قیام صرف ان کی وجہ سے ممکن ہوا ہے ۔ وینکٹ ریڈی نے کہا کہ تمام طبقات کی جدوجہد اور ان کے جذبہ کے باعث تلنگانہ کا قیام ممکن ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عثمانیہ یونیورسٹی سے تلنگانہ تحریک میں تیزی پیدا ہوئی اور عثمانیہ یونیورسٹی طلبہ کی جدوجہد سے علحدہ ریاست تلنگانہ کا قیام عمل میں آیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سی پی آئی علحدہ تلنگانہ تحریک میں پہلی صف میں تھی اور پارٹی سماجی انصاف کے لیے اس کی جدوجہد جاری رکھے گی ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر جنہوں نے پارٹی انحراف کی حوصلہ افزائی کی ہے ۔ ڈبل بیڈ روم مکانات کی تعمیر اور دلتوں کو تین ایکڑ اراضی تقسیم کرنے میں ناکام ہوگئے ہیں ۔ لیکن وہ جمہوری اقدار کی باتیں کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ عثمانیہ یونیورسٹی جو تلنگانہ تحریک کے دوران تحریک کا ایک مرکز بنی ہوئی تھی اب احتجاج کا مرکز بن گئی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT