Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / سماج میں حق تلفی اور ناانصافی سے غریب اور اوسط درجہ کے عوام کی اکثریت

سماج میں حق تلفی اور ناانصافی سے غریب اور اوسط درجہ کے عوام کی اکثریت

عنبرپیٹ میں پری پولیس ٹریننگ کا افتتاح ، کلکٹر میڑچل ایم وی ریڈی اور مہیش مرلی دھر بھگوت کا خطاب
حیدرآباد /27 مئی ( سیاست نیوز ) سماج میں حق تلفی اور ناانصافی کا شکار غریب اور اوسط درجہ کی عوام ہی زیادہ ہوتی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار ضلع کلکٹر میڑچل مسٹر ایم وی ریڈی نے کہا ۔ انہوں نے آج یہاں عنبرپیٹ میں پری پولیس ٹریننگ کیمپ کا افتتاح کیا ۔ اس موقع پر کمشنر راچہ کنڈہ پولیس مسٹر مہیش بھگوت اور دیگر موجودہ کلکٹر میڑچل نے پری ٹریننگ میں شریک امیدواروں سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ غریب اور اوسط درجہ کی عوام کیلئے امیدوار امید کی ایک کرن ثابت ہونا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ سماج کے اس انتہائی اہم طبقوں سے سرکاری ملازمتوں کیلئے امیدواروں کا انتخاب نہایت قابل مبارکباد اقدام ہے ۔ انہوں نے راچہ کنڈہ پولیس کے اقدامات کی ستائش کی ۔ کلکٹر نے کہا کہ ہزارہا روپئے خرچ کرتے ہوئے خانگی اداروں میں تربیت حاصل کی جاتی ہے ۔ لیکن پولیس میں بھرتی کیلئے پولیس کی جانب سے دی جارہی تربیت انتہائی معیاری ہے ۔ اس موقع پر مہیش مرلی دھر بھگوت نے بتایا کہ سال 2017 میں تلنگانہ حکومت کی جانب سے بڑے پیمانہ پر تقررات عمل میں لائے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست تلنگانہ وہ واحد ریاست ہے جہاں ملک میں کانسٹیبل کی تنخواہ سب سے زیادہ ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ راچہ کنڈہ حدود میں 4 مقامات پر تربیت دی جارہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ تحریری امتحان کیلئے بھی امیدواروں کو تیار کیا جارہا ہے ۔ کمشنر راچہ کنڈہ نے بتایا کہ عنبرپیٹ کیمپ کیلئے 250 امیدواروں کو منتخب کیا گیا ہے ۔ جن کا ٹسٹ لینے کے بعد انتخاب عمل میں لایا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ مہیشورم میں بھی پری پولیس ٹریننگ کیمپ کا ضلع کلکٹر رنگاریڈی مسٹر رگھونندن راؤ نے افتتاح کیا ۔ اس موقع پر جوائنٹ کمشنر راچہ کنڈہ مسٹر ترون جوشی و دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT