Tuesday , September 26 2017
Home / Top Stories / سماج کو ہر طرح کے تشدد سے پاک کرنے کی ضرورت

سماج کو ہر طرح کے تشدد سے پاک کرنے کی ضرورت

کثرت میں وحدت اور رواداری ہندوستان کی پہچان، صدر جمہوریہ پرنب مکرجی کا قوم سے آخری خطاب
نئی دہلی۔24 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) صدر جمہوریہ پرنب مکرجی نے عوامی دھارے کو تشدد سے پاک کرنے کی ضرورت پر زور دیا خواہ یہ تشدد جسمانی ہو یا پھر لفظی ہو۔ انہوں نے کہا کہ رواداری میں ہی ملک کی طاقت پنہاں ہے۔ پرنب مکرجی نے بحیثیت صدر جمہوریہ قوم سے آخری خطاب کرتے ہوئے کثرت میں وحدت اور رواداری کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک دوسرے کے ساتھ محبت اور حسن سلوک کے ذریعہ ہی سماج کی بنیادیں مضبوط ہوتی ہیں لیکن ہر دن ہم تشدد میں اضافہ ہی دیکھ رہے ہیں۔ اس تشدد میں صرف تاریکی، خوف اور عدم اعتماد کی فضاء پائی جاتی ہے۔ ہمیں عوامی دھارے کو ہر طرح کے تشدد خواہ وہ جسمانی ہو یا زبانی پاک کرنا ہوگا۔ پرنب مکرجی کل اپنے عہدے سے سبکدوش ہورہے ہیں۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ عدم تشدد پر مبنی سماج کے ذریعہ ہی سماج کے تمام طبقات بالخصوص نظرانداز کیئے گئے طبقات کی شراکت کو جمہوری عمل میں یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان صرف ایک جغرافیائی ملک نہیں ہے اس کی ایک طویل نظریاتی فلسفیانہ، صنعتی، اختراعی اور تجربات پر مبنی تاریخ ہے۔ صدیوں سے مختلف نظریات کے فروغ کے ذریعہ کثرت میں وحدت کو یقینی بنایا جاسکا۔ ہمہ اقسام کی تہذیب و ثقافت، ایقان اور زبانوں نے مل کر ہندوستان کو ایک خصوصی رنگ دیا ہے۔ ہم رواداری کے ذریعہ اسے مستحکم بناسکتے ہیں۔ صدر جمہوریہ نے گاندھی جی کے فلسفے کی عوام کو یاددلائی اور کہا کہ ایک ترقیافتہ سماج کی تشکیل باہمی اعتماد کی ذریعہ ہی ہوسکتی ہے۔ گاندھی جی چاہتے تھے کہ عوام متحد ہوکر آگے بڑھیں اور انہوں نے غریبوں پر توجہ دینے کی ضرورت ظاہر کی۔ صدر جمہوریہ نے کہا کہ ہمیں غریب ترین افراد کو بااختیار بنانا ہوگا اور ایسی پالیسیاں وضع کرنی ہوگی جن کے ذریعہ ہر شخص تک ترقی کے فوائد پہنچ سکیں۔ انہوں نے کہا کہ اچھی حکمرانی کا مطلب یہ ہے کہ عوام شفاف جوابدہ اور شراکت پر مبنی سیاسی ادارے جات کے ذریعہ خود اپنی زندگیوں کی بہتر تشکیل کرسکیں۔ ہمیں مل کر یہ کام کرنا ہوگا کیوں کہ مستقبل ہمیں ایک اور موقع نہیں دیگا۔پرنب مکرجی نے کہا کہ راشٹرپتی بھون میں 5 سال کے دوران انہوں نے انسانی خوشحال سماج کی تشکیل کے لیے کوششیں جاری رکھیں۔ پرنب مکرجی 340 کمروں پر مشتمل وسیع و عریض صدارتی محل سے کل اپنا بنگلہ منتقل ہوجائیں گے اور صدارتی ذمہ داری رام ناتھ کووند کے حوالے کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ 5 سال کے دوران ان کی کوشش یہی رہی کہ سب کے چہروں پر خوشیاں اور مسکراہٹ آئے۔

TOPPOPULARRECENT