Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / سمندری طوفان ارما سے کیربین کے علاقہ میں 17 ہلاک

سمندری طوفان ارما سے کیربین کے علاقہ میں 17 ہلاک

تباہی کی داستان چھوڑ کر سمندری طوفان کی امریکہ کی سمت پیشرفت
کیپ ہائیٹین ۔ (ہیتی) 8 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) سمندری طوفان ارما نے کیریبین کے علاقہ کو دہلا کر رکھ دیا اور اپنے پیچھے تباہی کی ایک داستان چھوڑی۔ کم از کم 17 افراد ہلاک ہوگئے جبکہ طوفان امریکہ کی جانب پیشرفت کر گیا۔ تقریباً 10 لاکھ افراد گھر چھوڑ کر فرار ہونے پر مجبور ہوگئے۔ تاہم 12 لاکھ افراد صلیب احمر کی اطلاع کے بموجب بے گھر ہوچکے ہیں لیکن اس تعداد میں اضافہ کا اندیشہ ہے اور یہ 2 کروڑ 60 لاکھ تک پہنچ سکتی ہے۔ توقع ہیکہ یہ عفریتی طوفان امریکہ کے ساحل سے علی الصبح ٹکرائے گا۔ ساحلی علاقہ جیسے فلوریڈا اور جارجیا جو پہلے ہی 2006ء کے بعد پہلی بار بڑے پیمانے پر تخلیہ کی مصیبت برداشت کررہے ہیں۔ اس سمندری طوفان سے ان کے دوبارہ بے گھر ہونے کا اندیشہ پیدا ہوگیا ہے۔ امریکہ کے مرکز برائے قومی سمندری طوفان نے طوفان ارما کو چوتھے زمرہ میں شامل کیا ہے جس کے ساتھ کم از کم ڈھائی سو کیلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوا چلے گی جبکہ انتباہ دیا گیا ہیکہ یہ انتہائی خطرناک ہوگی۔ کئی جزائر میں تیز رفتار ہواؤں سے چھتوں میں شگاف پڑ گئے ہیں اور عمارتوں کا اگلا حصہ گر پڑا ہے۔

کنکریٹ، کاروں اور بحری جہازوں، مال بردار بحری جہازوں کا ملبہ ہر طرف نظر آتا ہے۔ 60 فیصد مکان ناقابل رہائش بن گئے ہیں۔ فرانس میں بحیثیت مجموعی امکان ہیکہ یہ تعداد اور بھی زیادہ ہوسکتی ہے۔ یہاں کم از کم 20 کروڑ یورو کا نقصان پہنچا ہے۔ برطانیہ کی وزارت دفاع کے بموجب دو فوجی مال بردار طیارہ اس علاقہ کو بھیجے جارہے ہیں جن میں ارکان عملہ امدادی اشیاء اور تلاش کرنے کے آلات موجود ہوں گے۔ یوروپی ممالک نے فوری طور پر اپنے شہریوں کو کیریبین کا سفر نہ کرنے کی ہدایت دے دی ہے۔ فرانسیسی اور ولندیزی وزراء کے بموجب سینکڑوں مزید پولیس عملہ کو سینٹ مارٹن بھیجا جارہا ہے تاکہ لوٹ مار کا انسداد کرسکیں۔ سمندری طوفان سے بڑے پیمانے پر غذا، پانی اور پٹرول کی قلت پیدا ہوگئی ہے۔ ولندیزی وزیراعظم مارٹ رٹ نے کہا کہ صورتحال سنگین ہے۔ ان سے لوٹ مار کے واقعات کے بارے میں سوال کیا گیاتھا۔

 

 

TOPPOPULARRECENT