Monday , August 21 2017
Home / جرائم و حادثات / سنجیوا ریڈی نگر میں ترکی کی کرنسی ضبط ،سات افراد گرفتار ، ایس او ٹی کی کارروائی

سنجیوا ریڈی نگر میں ترکی کی کرنسی ضبط ،سات افراد گرفتار ، ایس او ٹی کی کارروائی

حیدرآباد /16 مئی ( سیاست نیوز ) شہر و نواحی علاقوں میں ان دنوں ترکی کی کرنسی کیلئے چرچہ منظر عام پر آرہے ہیں ۔ گذشتہ دنوں شہر کے سنجیوا ریڈی نگر میں کرنسی کو ضبط کرنے کا واقعہ کے بعد اب سائبرآباد پولیس نے کثیر مقدار میں ممنوعہ ترکی کی لیرا کرنسی کو ضبط کرلیا ۔ اور 7 افراد کو گرفتار کرلیا جو اس ترکی کی کرنسی غیر قانونی طو رپر گشت کروا رہے تھے ۔ سائبرآباد کی اسپیشل آپریشن ٹیم ایس او ٹی نے ملکاجگیری کے علاقہ سے گرفتار کرلیا اور ان کے قبضہ سے 220 لیرا کرنسی اور 7 سیل فون ضبط کرلیا ۔ جس کی مالیت 220 کروڑ بتائی گئی اور فی کرنسی 5,00,000 مالیت بتائی گئی ہے ۔ جو 10 کروڑ مالیت کے تھے ۔ پولیس کے مطابق 33 سالہ ٹی روپ چند ، 34 سالہ ستیہ کمار 34 سالہ رنجیت کمار 30 سالہ سرینواس راؤ 53 سالہ کرشنا موہن 50 وینکٹیش سربرامنیم اور 55 سالہ وینکٹ چلپتی ریڈی کو گرفتار کرلیا جبکہ ایک اور سرغنہ انیل کمار مفرور بتایا گیا ہے ۔ پولیس کے مطابق ایک خفیہ اطلاع پر کارروائی کی گئی ۔ روپ چند اور اس کے ساتھی جو گرفتار کرلئے گئے رقم حاصل ہونے کے بعد کرشنا اور گوداوری ڈسٹرکٹ سے ان تعلق ہے ۔ حیدرآباد پہونچے اور ٹولی کے مفرور سرغہ انیل کمار سے ملاقات کی اور رابطہ بنایا اور اس شخص کو دو نوٹوں کے بنڈل حوالے کیا ۔ جس میں 198 کرنسی نوٹ تھے ۔ جس میں ایک نوٹ کی مالیت 5 لاکھ اور جملہ 18 کروڑ کی ترکی کی لیرا کرنسی کے نوٹ تھے جس کے بعد گرفتار شخص کرشنا موہن جو ایک بابٹسیٹ چرج کا پادری بتایا گیا ہے ۔ اس شخص کے مقام پر منصوبہ تیار کیا جارہا تھا اور غیر قانونی طور پر کرنسی کا تبادلہ عمل میں لایا جارہا تھا کہ ایس او ٹی نے دھاوا کرتے ہوئے اس ٹولی کے خطرناک عزائم کو ناکام بنادیا ۔ یہ ترکش کی کرنسی لیرا کرنسی سال  2005 سے قبل کی ہے جو ناقابل قبول تھی ۔ ایس او ٹی نے گرفتار افراد کو مزید تحقیقات کیلئے ملکاجگیری پولیس کے حوالے کردیا ۔

TOPPOPULARRECENT